مشیرخارجہ نےکہاہےکہ پاکستان اوربیلاروس نےمختلف شعبوں میں دوطرفہ تعلقات کے فروغ کیلئے متعدد معاہدوں اور مفاہمت کی یادداشتوں پر دستخط کئے ہیں۔

پاکستان نے بھارتی مداخلت کےبارے میں تفصیلی دستاویزاقوام متحدہ میں جمع کرادی ہیں:سرتاج
20 نومبر 2015 (15:35)
0

مشیرخارجہ سرتاج عزیز نے ذرائع ابلاغ کی ان اطلاعات کو مستردکردیا ہے کہ پاکستان نے ملک میں بھارتی مداخلت کے بارے میں تفصیلی دستاویز اقوام متحدہ میں جمع نہیں کرائیں۔قومی اسمبلی میں وقفہ سوالات کے دوران ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ جمع کرائی گئی دستاویز میں فاٹا ، کراچی اور بلوچستان میں بھارتی مداخلت کے بارے میں کافی شواہد موجود ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان اور بیلاروس نے مختلف شعبوں میں دوطرفہ تعلقات کے فروغ کیلئے متعدد معاہدوں اور مفاہمت کی یادداشتوں پر دستخط کئے ہیں۔

سرتاج عزیز نے کہا کہ دونوں ملکوں نے ایک بزنس کونسل قائم کی ہے جس سے بیلاروس سے سرمایہ کاری لانے میں مدد ملے گی۔انہوں نے کہا کہ منیٰ حادثے میں 188 پاکستانی حجاج کرام شہید ہوئے جبکہ صرف تین پاکستانی ابھی تک لاپتہ ہیں۔ایک سوال پر وزیر تجارت نے کہا کہ پاکستان نے بھارت کو انتہائی پسندیدہ ملک کا درجہ نہیں دیا اور اس حوالے سے کوئی تجویز بھی زیر غور نہیں۔ انہوں نے کہا کہ مودی حکومت کے برسراقتدار آنے کے بعد اب تک بھارت کے ساتھ تجارت کے لئے کسی قسم کے مذاکرات بھی نہیں کئے گئے

انہوں نے کہا کہ حکومت نے ٹیکسٹائل سمیت دیگر شعبوں میں ایک لاکھ بیس ہزار نوجوانوں کو تربیت دینے کیلئے فنی تربیت کے پروگرام شروع کرنے کا منصوبہ بنایا ہے۔خرم دستگیر نے کہا کہ حکومت نے ٹیکسٹائل کے شعبے کی ترقی کیلئے بجٹ میں متعدد اقدامات کا اعلان کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے آئندہ سال کے آغاز پر ایک ٹیکسٹائل ایکسپو کے انعقاد کا منصوبہ بھی بنایا ہے جس کا مقصد ٹیکسٹائل کی مصنوعات کو متعارف کرانا ہے۔


انہوں نے کہا کہ چاول کی شاندار فصل اور کم برآمدات کے باعث نجی شعبے کے پاس باسمتی چاول کا وافر ذخیرہ موجود ہے۔ حکومت چاول کی برآمد میں نجی شعبے کو مدد فراہم کرنے کیلئے طریقہ کار وضع کرنے کے لئے متعلقہ افراد کے ساتھ رابطے میں ہے۔ایک نکتہ اعتراض پر قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے حکومت کی نجکاری پالیسی کی مخالفت کی ہے۔انہوں نے کہا کہ منافع بخش اداروں کی نجکاری نہ کی جائے اور نجکاری پالیسی کو بحث کیلئے پارلیمنٹ میں پیش کیا جانا چاہئے ۔

پیرس حملوں کی مذمت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اسلام کو بدنام کرنے کیلئے سازشیں تیار کی جا رہی ہیں ۔ عالمی برادری کو دہشت گردی کے خاتمے کیلئے متحد ہونا چاہئے۔

دریں اثناء پارلیمانی سیکرٹری برائے داخلہ مریم اورنگزیب نے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں مقامی حکومتوں کا ترمیمی آرڈیننس 2015 ایوان میں پیش کیا۔