عدالت نے فوٹو لیکس کے معاملے پر اٹارنی جنرل سے موقف پیش کرنے کیلئے کہا۔

مشترکہ تحقیقاتی ٹیم میں پیش ہونیوالوں کی آڈیو اور ویڈیو ریکارڈنگ کی جاسکتی ہے: سپریم کورٹ
20 جون 2017 (15:14)
0

پانامہ پیپرز کیس کی تحقیقات پر عملدرآمد کی نگرانی کرنے والے سپریم کورٹ کے تین رکنی بنچ نے قرار دیا ہے کہ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے روبرو پیش ہونے والوں کی آڈیو اور ویڈیو ریکارڈنگ کی جاسکتی ہے ۔
جسٹس اعجاز افضل کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے آج اپنے حکم میں کہا کہ آڈیو اورویڈیو ریکارڈنگ کو عدالتی کارروائی کا حصہ نہیں بنایا جائے گا، تاہم مشترکہ تحقیقا تی ٹیم کے روبر و پیش ہونے والوں کے بیانات کو سماعت کا حصہ بنایا جائے گا۔
عدالت نے فوٹو لیکس کے معاملے پر اٹارنی جنرل سے موقف پیش کرنے کیلئے کہا۔