بویا اور دیگان میں فوجی کنٹرول مضبوط بنایا جارہا ہے۔

آپریشن ضرب عضب طے شدہ منصوبے کے مطابق جاری ہے
20 جولائی 2014 (09:12)
0

شمالی وزیرستان میں آپریشن ضرب عضب طے شدہ منصوبے کے مطابق جاری ہے ، دہشتگردوں کا خاتمہ کیا جارہا ہے اور انہیں ان کے ٹھکانوں سے بھگا دیا گیا ہے۔ فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق میران شاہ کے بعد دو اہم دیہات بویا اور دیگان جو مقامی اور غیر ملکی دہشتگردوں کے بڑے گڑھ سمجھے جاتے تھے ، وہاں سے دہشتگردوں کا صفایا کردیاگیا ہے۔ بویا اور دیگان میں فوجی کنٹرول مضبوط بنایا جارہا ہے۔


میر علی میں مساکی، ہرمز اور میر علی بازار میں سیکورٹی فورسز کی طرف سے گھر گھر تلاشی کی کارروائی جاری ہے۔ میر علی اور اس کے گردونواح میں محصور دہشتگرد راکٹوں  ارٹروں، بھاری مشین گنوں اور سنائپر رائفلوں سے فائرنگ کررہے ہیں۔ میر علی میں فائرنگ کے تبادلے میں چار دہشتگرد ہلاک ہوگئے۔


دیسی ساخت کے بارہ بموں کو ناکارہ بنا یا گیا ۔ اس کے علاوہ علاقے سے دھماکہ خیز مواد تیارکرنے کی ایک فیکٹری ، بھاری مقدار میں اسلحہ وبارود اور غیر ملکی کرنسی بھی برآمد کی گئی۔ شمالی وزیرستان ایجنسی کے دوسرے علاقوں میں بھی دہشتگردوں اور ان کے ٹھکانوں کو نشانہ بنانے کی کارروائیاں جاری ہیں۔


کورکمانڈر لیفٹیننٹ جنرل خالد ربانی نے شمالی وزیرستان ایجنسی کے علاقوں میر علی ، بویا اوردیگان کا دورہ کیا اور آپریشن میں حصہ لینے والے فوجیوں سے ملاقات کی۔ بنوں، ڈیرہ اسماعیل خان اور ٹانک میں بے گھر ہونے والے افراد میں امدادی اشیاء کی تقسیم بھی جاری ہے۔