لیپ ٹاپ کا استعمال کرتے ہوئے انسان چوکس ہو جاتا ہے:سائنسدان
20 جنوری 2015 (21:23)
0

موبائل اور ٹیبلٹ کی نیلی روشنی نیند کی دشمن بن سکتی ہے۔ جو بھی شخص شام کو اسمارٹ فون، ٹیبلٹ یا پھر لیپ ٹاپ استعمال کرتا ہے، اس کو گہری نیند بھی نہیں آئے گی۔ اس کی وجہ ان ڈیوائسز سے نکلنے والی وہ نیلی روشنی ہے، جو ہمارے اعصابی نظام کو متاثر کرتی ہے۔


سوئٹرزلینڈ کی بازل یونیورسٹی کے سائنسدانوں کے مطابق ٹائپنگ کرتے ہوئے، ایس ایم ایس پڑھتے ہوئے یا پھر لیپ ٹاپ کا استعمال کرتے ہوئے انسان چوکس ہو جاتا ہے اور چاہے بیڈ میں ہی کیوں نہ لیٹا ہو، اس کی نیند غائب ہونا شروع ہو جاتی ہے۔ نیورولوجی ماہرین کے مطابق اس کی ایک وجہ نیلی روشنی ہے،۔


بازل یونیورسٹی میں قائم 'سینٹر فار کرونو بیالوجی' کے سربراہ کا کہناہے کہ انسان کا اعصابی نظام انتہائی حساس ہے اور نیلی روشنی پر بہت تیزی سے ردعمل ظاہر کرتا ہے۔ وہ کہتے ہیں نیلی روشنی فوری طور پر انسان کے اس اندرونی گھڑی کو متاثر کرتی ہے، جو ہماری نیند کے ساتھ منسلک ہوتی ہے،یہ نیلے رنگ کا شاور بہت تیزی کے ساتھ ہماری نیند اڑا دیتا ہے۔