علی گیلانی کی گاؤکدل کے علاقے میں مکمل ہڑتال کی اپیل
20 جنوری 2015 (12:59)
0

مقبوضہ کشمیر میں بزرگ حریت رہنماء سید علی گیلانی نے گاؤکدل کے علاقے میں مکمل ہڑتال کی اپیل کی ہے۔ہڑتال کی یہ اپیل بدترین قتل عام کی برسی کے موقع پر کی گئی ہے جس میں پچاس بے گناہ افراد کو قتل کر دیا گیا تھا۔سرینگر میں ایک بیان میں انہوں نے انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں سے اپیل کی کہ وہ مقبوضہ وادی میں قتل عام کے واقعات میں ملوث افراد کوسزاء دینے کیلئے ان واقعات کی غیرجانبدارانہ تحقیقات کرنے کیلئے اپنا کردار ادا کریں۔


انہوں نے کہا کہ گزشتہ پچیس سال کے دوران بھارتی فوج اور پولیس اہلکاروں نے ایک لاکھ سے زائد کشمیریوں کو ہلاک کیا۔ادھر ، کل جماعتی حریت کانفرنس کے ترجمان نے اس بات پر افسوس ظاہر کیا کہ پچیس سال گزرنے کے باوجود سانحہ گاؤ کدل میں ملوث ایک فوجی کو بھی سزاء نہیں دی گئی اور آزاد تحقیقاتی ادارے سے اس واقعے کی غیرجانبدارانہ تحقیقات کا مطالبہ بھی پورا نہیں کیا گیا۔

 =========================

بزرگ حریت رہنماء سید علی گیلانی اور کل جماعتی حریت کانفرنس نے گاؤ کدل کے شہداء کی برسی کے موقع پر شہداء کو زبردست خراج عقیدت پیش کیا ہے۔ایک رپورٹ کے مطابق بھارتی فوج نے اکیس جنوری انیس سو نوے کو سرینگر کے علاقے گاؤکدل میں پرامن مظاہرین پر جو بھارتی فوجیوں کی جانب سے متعدد خواتین کی بے حرمتی کرنے کے خلاف احتجاج کر رہے تھے اندھادھند فائرنگ کر کے پچاس سے زائد بے گناہ افراد کو شہید کر دیا تھا۔


سیدعلی گیلانی نے سرینگر میں ایک بیان میں کہا کہ گزشتہ پچیس سال کے دوران بھارتی فوج اور پولیس اہلکاروں نے بھارت سے آزادی کے مطالبے پر ایک لاکھ سے زائد کشمیریوں کو شہید کیا ہے۔انہوں نے انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں سے اپیل کی کہ وہ مقبوضہ وادی میں قتل عام کے واقعات میں ملوث افراد کو سزاء دلوانے کیلئے ان واقعات کی غیرجانبدارانہ تحقیقات کرنے کیلئے اپنا کردار ادا کریں۔


بزرگ رہنماء نے گاؤکدل کے علاقے میں کل مکمل ہڑتال کی اپیل بھی کی ہے۔