صدرنے واضح کیا کہ حکومت نے اقتصادی راہداری منصوبے کا روٹ تبدیل نہیں کیا۔

اقتصادی راہداری سے تمام صوبوں کو فائدہ پہنچے گا:ممنون حسین
20 فروری 2016 (20:52)
0

صدر ممنون حسین نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے خاتمے کے لئے آپریشن کراچی سمیت ملک کے تمام حصوںمیں جاری رہے گا۔
انہوں نے ہفتہ کے روز اسلام آباد میں سرحد یونیورسٹی آف سائنس اینڈ انفارمیشن ٹیکنالوجی کے کانووکیشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس مسئلے کا واحد حل گمراہ عناصر کو کیفر کردار تک پہنچانا ہے۔
صدر نے کہا کہ پاکستان صنعتی ' معاشی اور ٹیکنالوجی کی ترقی کے نئے دور میں داخل ہورہا ہے۔
انہوں نے کہا کہ اگر قوم جدید دور کے تقاضے پورے کرے تو وہ ترقی اور خوشحالی حاصل کرسکتی ہے۔
انہوں نے اس امر پر افسوس ظاہر کیا کہ پاکستان کے شاندار سٹرٹیجک محل وقوع سے ماضی میں استفادہ نہیں کیا جاسکا۔
تاہم اس معاملے کو قومی ترجیحات میں شامل کرلیا گیا ہے اور اس سلسلے میں کام تیزی سے جاری ہے۔
صدر نے کہا کہ خیبرپختوا اور قبائلی عوام اپنے علاقوں میںخوفناک دہشت گردی کے باوجود چٹان کی طرح کھڑے ہیں۔
انہوں نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ وہ سرحد یونیورسٹی کے فاصلاتی تعلیمی پروگراموں کو فوری طور پر قبائلی علاقوں تک توسیع دیں۔
صدر نے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری صرف سڑکوں کے جال بچھانے کا نہیں بلکہ ایک بڑامنصوبہ ہے۔
انہوں نے واضح کیا کہ حکومت نے اقتصادی راہداری منصوبے کا روٹ تبدیل نہیں کیا اور اس بارے میں بے بنیاد پراپیگنڈہ کیا گیا۔
انہوں نے طلباء سے کہا ترقیاتی منصوبوں کی بروقت تکمیل اور ملکی اقتصادی استحکام یقینی بنانے کیلئے ان کی مکمل حمایت کریں۔
انہوں نے کہا کہ جدید تعلیم کے حصول کے بغیر کوئی قوم ترقی نہیں کرسکتی۔
ممنون حسین نے کہا کہ حکومت تعلیم کے فروغ پر پوری توجہ دے رہی ہے اور ملک میں یکساں نصاب رائج کرنے کی کوششیں کی جارہی ہیں۔