دونوں رہنمائوں نے چینی تعاون سے پاکستان میں شروع کیے جانے والے 8 منصوبوں کی تختی کی نقاب کشائی بھی کی۔

پاکستان،چین میں تعاون کیلئے51معاہدوں اور مفاہمتی یادداشتوں پر دستخط
20 اپریل 2015 (19:09)
0

پاکستان اور چین نے مختلف شعبوں میں تعاون کے لئے 51 معاہدوں اور مفاہمت کی یادداشتوں پر دستخط کیے ہیں۔
اسلام آباد میں دستخطوں کی تقریب میں چین کے صدر شی چن پنگ اور وزیراعظم نوازشریف موجود تھے۔
دونوں رہنمائوں نے چینی تعاون سے پاکستان میں شروع کیے جانے والے 8 منصوبوں کی تختی کی نقاب کشائی بھی کی۔
وزیراعظم نوازشریف اور صدر شی چن پنگ نے ویڈیو لنک کے ذریعے پانچ منصوبوں کا سنگ بنیاد رکھا۔
یہ منصوبے اور معاہدے پاک چین اقتصادی راہداری ' توانائی ' بنیادی ڈھانچے ' زراعت ' تحقیق اور ٹیکنالوجی ' تعلیم اور دیگرشعبوں سے متعلق ہیں۔
اس موقع پروزیر اعظم نے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان طے پانے والے معاہدوں اور مفاہمت کی یادداشتوں کو چین کی ٹھوس مالی اور تکنیکی معاونت حاصل ہے۔
انہوں نے کہا کہ چین کے ساتھ دوستی پاکستان کی خارجہ پالیسی کا اہم حصہ ہے۔
انہوں نے کہا کہ پاک چین دوستی کی نوعیت کاک بہترین اندازہ پہاڑوں سے بلند ' سمندر سے گہرے' شہد سے زیادہ میٹھی اور فولاد سے زیادہ مضبوط ہونے کے استعاروں سے لگایا جاسکتاہے۔
چین کے صدر نے اپنے تاثرات میں کہا کہ ان کے دورے کا اہم مقصد پاکستان کے ساتھ اسٹرٹیجک شراکت داری اور دوستانہ تعلقات کومزید مضبوط کرنا اور فروغ دینا ہے۔
انہوں نے یقین دلایا کہ چین پاکستان کی پائیدار سماجی اقتصادی ترقی کیلئے اپنا کردار ادا کرتا رہے گا اور خصوصاً بلوچستان کی ترقی پر توجہ دے گا۔
چین کے صدر نے کہا کہ آئندہ دس برس کے دوران پاکستان کے ساتھ اسٹرٹیجک اقتصادی اشتراک عمل پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔
انہوں نے کہا کہ دونوں ملکوں کا مستقبل مشترک ہے اور آج ہم نے امن و ہم آہنگی کو فروغ دینے کیلئے کام جاری رکھنے کے اپنے عزم کا اعادہ کیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ چین شنگھائی تعاون تنظیم کی مستقل رکنیت دلوانے کیلئے پاکستان کی بھرپور حمایت جاری رکھے گا۔
شی چن پنگ نے کہا کہ ان کا ملک تمام شعبوں میں پاکستان کے ساتھ اپنے تعلقات کومزید فروغ دینے کیلئے لگن کے ساتھ کام کرے گا۔
انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک میں گہرے برادرانہ تعلقات قائم ہیں اور انہوں نے ہمیشہ مختلف مواقع پر ایک دوسرے کی حمایت کی ہے۔