Monday, 30 November 2020, 01:15:44 am
تعمیراتی کام میں تیزی سے ملکی معیشت بہتراور لوگوں کو روزگارملے گا: وزیر اعظم
November 20, 2020

وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت قومی رابطہ کمیٹی برائے ہاؤسنگ، تعمیرات و ڈویلپمنٹ کا ہفتہ وار اجلاس منعقد ہوا۔

اجلاس میں وزیراعظم کے معاونِ خصوصی ملک امین اسلم, مشیر ڈاکٹر عشرت حسین، معاون خصوصی شہباز گل، وفاقی و صوبائی سیکرٹری صاحبان اور سینئر افسران شریک ھوئے۔

اجلاس سے خطاب کرتے ھوئے وزیراعظم نے کہا کہ تعمیراتی کام میں تیزی سے ملکی معیشت بہتر ہوگی اور لوگوں کو روزگار کے مواقع میسر ہونگے.  

وزیر اعظم نے پنجاب حکومت کو تعمیراتی کام کے حوالے سے موصول شدہ درخواستیں مروجہ قوانین  کے مطابق جلد از جلد منظور کر نے کی ہدایت. 

وزیر اعظم نے پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اور نیپرا کو سٹیٹ بینک آف پاکستان کے ساتھ ملکر تعمیراتی شعبے سے متعلقہ مسائل جلد حل کرنے کی ہدایت. 

وزیر اعظم نے نیا پاکستان ہاؤسنگ سکیم کے حوالے سے آگاہی اجاگر کرنے پر بھی زوردیا۔.

گورنر سٹیٹ بنک نےاجلاس کو آگاہ کیا کہ بنکوں کی طرف سے نیا پاکستان ہاؤسنگ سکیم کے تحت مکانات کی تعمیر کیلئے قرضوں کی حصول میں سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جارہا ہے. انہوں نے بتایا کہ  عوام الناس کی آسانی کیلئے ملک بھر کے تمام ضلعوں میں موجود بنکوں کی پچاس فیصد برانچوں میں تعمیرات  کے لئے قرضہ جات کی فراہمی کے لئے خصوصی ڈیسک قائم کئے جائیں گے.

بنک الحبیب کی طرف سے اجلاس کو آگاہ کیا گیا کہ تعمیراتی شعبے کیلئے اب تک 6ارب روپے کی منظوری دی جا چکی ہے.  

چیف سیکرٹری پنجاب نے اجلاس کو بتایا کہ صوبے بھر سے 44 ملین مربع فٹ پر تعمیراتی کام  کیلئے درخواستیں موصول ہو چکی ہیں جس میں  سے 20 ملین مربع فٹ پر تعمیرات کیلئے منظوری دی جا چکی ہے. انہوں نے مزید بتایا کہ تعمیرات سے وابستہ تمام صنعتوں بشمول سیمنٹ, اینٹوں اورسریا کی کھپت میں اضافہ ہوا ہے. اجلاس کو بتایا گیا کہ پنجاب میں 44 ملین مربع فٹ پر تعمیراتی کام شروع ہونے کے بعد صوبے میں تقریباً 1 کھرب روپے کی معاشی سرگرمیاں شروع ہوگی. 

چیف سیکرٹری خیبر پختون خواہ نے اجلاس کو  آگاہ کیا کہ صوبے بھر سے تقریباً 6 ملین مربع فٹ پر نئی  تعمیرات کیلئے درخواستیں موصول ہو چکی ہیں.  انہوں نے مزید کہا کہ منظوری کے بعد صوبے میں 100 ارب روپے کی معاشی سرگرمیاں شروع ہوگی. 

Error
Whoops, looks like something went wrong.