Tuesday, 25 June 2019, 10:28:21 am
بھارت ظالمانہ پالیسیوں سے کشمیر کی جدوجہد آزادی کو کمزور نہیں کر سکتا، مزاحمتی قیادت
February 20, 2019

فائل فوٹو

مقبوضہ کشمیرمیں مشترکہ مزاحمتی قیادت نے کہاہے کہ بھارت مقبوضہ علاقے میں ظالمانہ پالیسیوں اور سیاسی مخالفیںکی سرگرمیوں پر پابندیاں عائد کر کے کشمیر کی جدوجہد آزادی کو کمزور نہیں کر سکتا ۔

کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق سیدعلی گیلانی ، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل حریت قیادت نے سرینگر میں جاری ایک مشترکہ بیان میں بھارت پر واضح کیاکہ عوامی تحاریک کو فوجی مظالم ، پولیس کے تشدد اور قتل عام کے ذریعے شکست نہیں دی جاسکتی ۔

حریت قائدین نے بھارت کے غیر قانونی تسلط کے خلاف اپنی جدوجہد آزادی پر امن اورسیاسی طورپر جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کیا۔

حریت فورم کے چیئرمین میرو اعظ عمر فاروق نے سرینگرمیں جاری ایک بیان میں بھارت میں کشمیری طلبا اور تاجروں پر بڑھتے ہوئے حملوں کو شرمناک قراردیا ہے ۔

تحریک حریت جموں وکشمیر کے چیئرمین محمد اشرف صحرائی نے ایک بیان میں کہاکہ تنازعہ کشمیر کو صرف اسکے تاریخی پس منظر کے تحت ہی حل کیا جاسکتاہے۔

ہندو انتہا پسندوں کے گروپوں نے پونچھ میں مسلمانوں کی کروڑوں روپے مالیت کی املاک کو نقصان پہنچایا ہے ۔ ہندوبلوائیوں نے پونچھ قصبے کے علاقے محلہ Alapirمیں مسلمان مخالف اشتعال انگیزنعرے لگائے اور دیگر املاک کے علاوہ نجی گاڑیوں کو تباہ کر دیا۔

برسلز میں یورپی پارلیمنٹ کی انسانی حقوق کے بارے میں ذیلی کمیٹی کے زیر اہتمام ایک تقریب کے مقررین نے اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کی کشمیر بارے جون2018 کی رپورٹ میں پیش کی گئی سفارشات پر عمل درآمد پر زوردیا ہے۔