وزیر منصوبہ بندی نے کہا کہ فاٹا کا بجٹ24ارب50کروڑ روپے تک بڑھا دیا گیا جبکہ آزاد کشمیر کا بجٹ دوگنا کر دیا گیا ہے۔

آئندہ مالی سال مجموعی ملکی پیداوار کی شرح6فیصد تک بڑھنے کا امکان،احسن
19 مئی 2017 (17:49)
0

منصوبہ بندی کے وزیر احسن اقبال نے کہا ہے کہ ملک کے اقتصادی اشاریے انتہائی مثبت ہیں اور آئندہ مالی سال میں مجموعی ملکی پیداوار کی شر ح چھ فیصد تک بڑھنے کا امکان ہے۔

جمعہ کے روز اسلام آباد میں صحافیوں کو بریفنگ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ رواں مالی سال زراعت کے شعبے نے غیر معمولی کارکردگی دکھائی ہے جس کی شرح نمو 3.5 فیصد رہی اور آئندہ سال اس کی کارکردگی مزید بہتر ہونے کا امکان ہے۔
وفاقی وزیر نے کہا کہ وزیراعظم کی جانب سے کسانوں کو قرضوں کی سہولت، کھاد اور بجلی کے بلوں پر اعانت سمیت دیگر مراعات کی فراہمی کے نتیجے میں زراعت کے شعبے نے نمایاں کارکردگی دکھائی۔
انہوں نے کہا کہ مصنوعات سازی کے شعبے نے بھی گیس اور بجلی کی بلاتعطل فراہمی کے باعث اطمینان بخش کارکردگی دکھائی جس سے صنعتی شعبے میں ترقی ہوئی۔
احسن اقبال نے کہا کہ فاٹا کا ترقیاتی بجٹ چوبیس ارب پچاس کروڑ روپے تک بڑھا دیا گیا ہے جبکہ آزاد کشمیر کا بجٹ بھی دوگنا کرکے دس سے بیس ارب روپے کر دیا گیا ہے۔
اسی طرح گلگت بلتستان کا بجٹ بھی نو ارب سے بڑھا کر پندرہ ارب روپے مقرر کر دیا گیا ہے۔
وفاقی وزیر نے کہا کہ گوادر میں سترہ ارب روپے مالیت کے ترقیاتی منصوبے مکمل کیے جائیں گے۔

احسن اقبال نے کہا کہ سماجی شعبے کا ترقیاتی بجٹ بھی نوے ارب سے بڑھا کر ایک سو پینتیس ارب روپے کر دیا گیا ہے۔ چین پاکستان اقتصادی راہداری کے تحت منصوبوں کے لئے ایک سو اسی ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔
وفاقی وزیر نے کہا کہ معیاری تعلیم کے فروغ کے لئے اعلیٰ تعلیم کمیشن کے لئے پینتیس ارب روپے مختص کیے جائیں گے۔
انہوں نے کہا کہ موجودہ مالی سال کے دوران مجموعی ملکی پیداوار کی شرح نمو پانچ اعشاریہ تین فیصد رہی۔
وفاقی وزیر نے کہاکہ ریڈیو پاکستان اور پاکستان ٹیلی ویژن میں بڑی تبدیلیوں کیلئے خطیر رقم مختص کی جائے گی۔
احسن اقبال نے کہا کہ ریلوے کے لئے پینتالیس ارب روپے مختص کیے جارہے ہیں جبکہ پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے منصوبوں کے لئے بارہ ارب روپے فراہم کیے جائیں گے۔
انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کے قومی صحت بیمہ پروگرام کے لئے دس ارب روپے مختص کیے جارہے ہیں۔