مشیرخارجہ نے کہاکہ یہ صورتحال بھارت کی طرف سے بڑے پیمانے پر روایتی اورایٹمی ہتھیاروں اور میزائل پروگرام کی دلالت کرتی ہے۔

19 مئی 2016 (21:44)
0

پاکستان نے بھارت کی طرف سے بحرہندمیں ایٹمی اسلحے کی سرگرمیوں میں اضافے پر شدید تشویش ظاہر کی ہے اور کہا ہے کہ وہ اپنی دفاعی صلاحیت کوبڑھانے کیلئے تمام ضروری اقدامات کرے گا ۔
مشیرخارجہ سرتاج عزیز نے جمعرات کے روز سینٹ میں بیان دیتے ہوئے کہاکہ پاکستان اپنی دفاعی ضروریات سے غافل نہیں ہے اورہم اسلحے کی دوڑ میں شامل ہوئے بغیر مناسب ٹیکنالوجی کے ذریعے اپنی دفاعی صلاحیتوں کوجدید خطوط پر استوار کرینگے۔
بھارت کے حالیہ انٹریٹپرمیزائل اورکے فور ایٹمی آبدوز سے میزائل تجربے کا حوالہ دیتے ہوئے مشیرخارجہ نے کہاکہ یہ صورتحال بھارت کی طرف سے بڑے پیمانے پر روایتی اورایٹمی ہتھیاروں اور میزائل پروگرام کی دلالت کرتی ہے جس سے بحرہند بھارت کی ایٹمی جنونیت کا شکار ہوجائے گا۔
انہوں نے کہاکہ بحرہند میں ایسے اقدامات سے جنوبی ایشیاء کا دفاعی توازن خراب ہوگا اور بحرہند سے منسلک تمام 32 ممالک کی میری ٹائم سیکورٹی بھی متاثر ہوگی انہوں نے کہاکہ یہ اقدامات وزیراعظم نوازشریف کی پرامن ہمسائیگی اورامن کی پالیسی سے متضاد ہیں ۔
مشیرخارجہ نے کہا کہ اس سال ستمبر میں جنرل اسمبلی کے آئندہ اجلاس میں ایک قرارداد پیش کرنے کی تجویز ہے جس کا مقصد بحرہند کو نیوکلیئر فری زون بنانا ہے پاکستان اس قرارداد کی تائید کیلئے تمام متعلقہ بتیس ممالک سے رابطہ کرے گا اور اس معاملے کو تمام بڑی قوتوں کے ساتھ دوطرفہ طورپر اٹھائے گا ۔
چیئرمین سینٹ نے امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان کے بیان کا حوالہ دیا جس میں انہوں نے دعوی کیا ہے کہ امریکہ نے پاکستان میں ایف سولہ کے تمام آپریشنز کی منظوری دی ہے اور کہا کہ ہم نے اس بیان کا سخت نوٹس لیا ہے کیونکہ پاکستان ایک خودمختار ملک ہے ۔
چیئرمین نے کہا کہ پاکستان کی داخلی اور قومی سلامتی کے معاملات میں دخل دینا امریکہ کا کام نہیں ۔
مشیر نے کہاکہ یہ معاملہ امریکہ کے ساتھ اٹھایا جائے گا اور چیئرمین کے تحفظات کے اپنی آگاہ کیاجائے گا ۔
انتخابی اصلاحات سے متعلق پارلیمانی کمیٹی کے چیئرمین اسحاق ڈار نے ایوان میں انتخابی اصلاحات کی پارلیمانی کمیٹی کی ابتدائی رپورٹ پیش کی ۔
انہوں نے ایوان کو بائیسویں آئینی ترمیم کے اہم نکات کے بارے میں بتایا جو آج ایوان زیریں میں منظورکی گئی ۔
میاں عتیق شیخ کے توجہ دلائو نوٹس کا جواب دیتے ہوئے وزیرتجارت خرم دستگیر نے کہاکہ غیرمعمولی موسمی حالات کی وجہ سے دنیا کے دوسرے حصوں کی طرح پاکستان میں بھی کپاس کی پیداوار متاثر ہوئی ہے ۔
ایوان کا اجلاس اب کل صبح دس بجے ہوگا ۔