نواز شریف نے کہا کہ حکومت ملک کو تما م چیلنجوں سے نکالنے کیلئے پرعزم ہے۔

File photo

اقتصادی راہداری سے ملک پائیدار ترقی کی راہ پرگامزن ہوجائیگا:وزیراعظم
19 مئی 2016 (14:54)
0

وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے سے ملک پائیدار ترقی کی راہ پرگامزن ہوجائے گا۔ وہ جمعرات کے روز گلگت میں پاکستان چائنہ آپٹیکل فائبر کیبل منصوبے کے سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب سے خطاب کررہے تھے۔

وزیراعظم نے کہا کہ اس بڑے منصوبے سے عوام کو نہ صرف معاشی فوائد حاصل ہونگے بلکہ نوجوانوں کے لئے روزگار کے مواقع پیدا کرکے انتہاپسندی کے مسئلے پر قابو پانے میں مدد ملے گی۔
نواز شریف نے کہا کہ حکومت ملک کو تما م چیلنجوں سے نکالنے کے لئے پرعزم ہے اور اس نے اس سلسلے میں نمایاں کامیابیاں حاصل کی ہیں۔
انہوں  نے کہاکہ پاکستان چائنہ آپٹیکل فائبر کیبل منصوبہ انفارمیشن ٹیکنالوجی اور ٹیلی کام کی ترقی میں ایک سنگ میل ثابت ہوگا۔
وزیراعظم نے کہا کہ منصوبے سے گلگت بلتستان میں تھری جی اور فورجی کی خدمات میسر آئیں گی ۔انہوں نے کہا کہ آپٹیکل فائبر جیسے منصوبوں کے آغاز سے گلگت بلتستان جلد ایک انتہائی ترقی یافتہ علاقہ بن جائے گا۔
انہوں  نے کہا کہ بلوچستا ن میں شاہراہوں کے نیٹ ورک کو ترقی دی جارہی ہے جس سے یہ صوبہ ملک کے باقی حصوں سے منسلک ہوجائے گا۔
وزیراعظم نے متعلقہ حکام کو پاکستان چائنہ آپٹیکل فائبر کیبل منصوبے کو گوادر اور ملک کے دیگر دوسرے حصوں تک توسیع دینے کی ہدایت کی۔
انہوں  نے علاقے کے نوجوانوں کو جدید فنی تعلیم سے آراستہ کرنے کے لئے گلگت میں ایک فنی تربیت کا ادارہ قائم کرنے کا اعلان بھی کیا۔

اس سے پہلے   وزیراعظم نواز شریف نے گلگت میں گلگت بلتستان سی پیک پٹرولنگ پولیس کا افتتاح کیا۔
تین سو اہلکاروں پر مشتمل پٹرولنگ پولیس گلگت بلتستان میں راہداری منصوبے کے 439 کلو میٹر طویل حصے پر ٹریفک کی محفوظ اور بلا تعطل روانی یقینی بنانے میں مدد دے گی۔
چین نے پٹرولنگ پولیس کے لئے 25 گاڑیوں کا تحفہ دیا ہے۔

اس موقع  پر اظہار خیال کرتے ہوئے انفارمیشن ٹیکنالوجی کی وزیر مملکت انوشہ رحمان نے کہاکہ آپٹیکل فائبر منصوبہ چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے کا حصہ ہے جس سے پاکستان خطے میں ٹیلی مواصلات کامرکز بن جائے گا۔
انہوں  نے کہا کہ حکومت ڈیجیٹل پاکستان کے منصوبے پر عمل پیرا ہے جس کامقصدملک کے پسماندہ اور ترقی پذیر علاقوں تک براڈ بینڈ کی سروسز یقینی بناناہے۔
وزیر مملکت نے کہا کہ آزادکشمیر اور گلگت بلتستان میں تھری جی اور فور جی کی سروسز کی فراہمی یقینی بنانے کے لئے ایک جامع حکمت عملی واضح کی جارہی ہے۔

اس سے پہلے گلگت بلتستان کونسل کے نئے منتخب ارکان سے حلف لینے کے بعد تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ ملک کی توانائی کی بڑھتی ہوئی ضروریات پوری کرنے کیلئے دیامر بھاشا ڈیم پر تعمیراتی کام جلد شروع کیا جائے گا۔
انہوں  نے کہا کہ حکومت نے ڈیم کی زمین حاصل کرنے کیلئے ایک سو پانچ ارب روپے کی منظوری دی ہے۔
نواز شریف نے کہا کہ داسو ڈیم پر بھی کام جلد شروع کیا جائے گاانہوںنے کہا کہ ایبٹ آباد پر بھی پن بجلی کا منصوبہ شروع کیا جائے گا جس سے ستائیس میگاواٹ بجلی پیدا کرنے میں مدد ملے گی۔
وزیراعظم نے کہا کہ ان کی خواہش ہے کہ گلگت بلتستان کے ترقیاتی بجٹ میں کئی گنا اضافہ کیا جائے تاکہ اس علاقے کو ملک کے دوسرے علاقوں کے برابر لایا جاسکے۔