پاکستان کا متاثرہ علاقوں میں ذرائع ابلاغ کو رسائی اور امداد کی تقسیم کی اجازت د ینے کا مطالبہ۔

 اوآئی سی کا میانمار میں مسلمانوں کیخلاف پرتشدد واقعات پر شدید اظہار تشویش
19 جنوری 2017 (21:15)
0

اسلامی تعاون تنظیم نے میانمار میں روہنگیا مسلمانوں کی حالت زار کوتاریخ کا بدترین بحران قرار دیاہے اور ان کے خلاف امتیازی ، جبر اور تشدد کی جاری کارروائیوں پر شدید تشویش ظاہر کی ہے۔
ان خیالات کا اظہار جمعرات کے روز ملائیشیا کے شہر کوالالمپور میں وزرائے خارجہ کونسل کے غیرمعمولی اجلاس کے اختتام پر جاری کیے گئے اعلامیے میں کہا گیا۔
قرارداد میں مسلم ممالک پر زور دیا گیا کہ وہ اس معاملے میں فوری مداخلت کریں اور عالمی برادری میانمار میں مفاہمتی عمل کے آغازمیں اپنا کرداراداکرے۔
اس سے پہلے ، مشیر خارجہ سرتاج عزیزنے عوام کی فلاح و بہبود کیلئے میانمار کی حکومت کی طرف سے راکھائن میں مشاورتی کمیشن کے قیام کی تعریف کی۔
انہوں نے میانمار کی حکومت پر زور دیا کہ وہ متاثرہ علاقوں میں ذرائع ابلاغ کو رسائی اور امداد کی تقسیم کی اجازت دے۔
مشیر خارجہ نے کہا کہ جموں و کشمیر ، فلسطین اور میانمار جیسے علاقوں کے بارے میں جہاں مسلمان تکلیف میں ہیں ، پاکستان نے مختلف بین الاقوامی فورمزپر مسلسل آواز اٹھائی ہے۔
ملائیشیا کے وزیراعظم نجیب بن تن رزاق نے اپنے اہم خطاب میں مسلم ممالک پر زور دیا کہ وہ روہنگیا مسلمانوں کے مسائل کے حل کے لئے ٹھوس اقدامات کریں، انہوں نے میانمار کی حکومت پر زور دیا کہ وہ بین الاقوامی قانون کا احترام کرے اور روہنگیا مسلمانوں کو بھی میانمار کا قانونی شہری تسلیم کرکے انہیں ان کے حقوق دے۔