کل جماعتی حریت کانفرنس کی 86 سالہ شاہ ولی محمد اور نذیر گنائی پر ایک بار پھر کالا قانون لگانے کی مذمت
19 جنوری 2017 (15:27)
0

مقبوضہ کشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس نے 86 سالہ شاہ ولی محمد اور نذیر احمد گنائی پر ایک بار پھر کالے قانون پبلک سیفٹی ایکٹ لگانے اور مولانا سرجان برکی کو سرینگر سینٹرل جیل منتقل کرنے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔سرینگر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے ترجمان نے کہا ہے کہ کٹھ پتلی وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی کا یہ دعویٰ کہ عدالت کی جانب سے ضمانت سے رہا کئے جانے والوں کو دوبارہ گرفتار نہیں کیا جائے گا ، سراسر جھوٹ ہے۔ترجمان نے ان افراد کی دوبارہ گرفتاری کو بدترین ریاستی دہشتگردی قرار دیا ہے
انہوں نے انسانی حقوق کی عالمی تنظیموں سے اپیل کی کہ وہ پہلے سے نظربند رہنماؤں کی دوبارہ گرفتاری کا نوٹس لیں اور مقبوضہ وادی میں لاقانونیت اور عدالت کے احکامات کی خلاف ورزی کا نوٹس لیں۔
دریں اثناء کٹھ پتلی انتظامیہ نے خبردار کیا ہے کہ ان کشمیری ملازمین کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی جو اس ماہ کی چھبیس تاریخ کو بھارت کے یوم جمہوریہ کی تقریب میں شرکت نہیں کریں گے۔