عدالت نے معاملے کی تحقیقات کیلئے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم تشکیل دینے کی ہدایت کی ہے۔

سپریم کورٹ: وزیراعظم کو نااہل قرار دینے سے متعلق تحریک انصاف کی درخواست مسترد
20 اپریل 2017 (14:38)
0

سپریم کورٹ نے پانامہ پیپرز کے مقدمے میں نواز شریف نااہل قرار دینے سے متعلق پاکستان تحریک انصاف کی درخواست مسترد کر دی ہے اور معاملے کی تحقیقات کیلئے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم تشکیل دینے کی ہدایت کی ہے۔

پانچ رکنی بنچ کا محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہاکہ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم 7دنوں کے اندر تشکیل دی جائے  ۔تحقیقاتی ٹیم ہر دوہفتے بعد اپنی پیش رفت رپورٹ سپریم کورٹ میں پیش کرے گی ۔
اس ٹیم میں انٹیلی جنس بیورو ، ملٹری انٹیلی جنس ، وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے )، قومی احتساب بیورو کے نمائندے شامل ہونگے ۔
بنچ کے سربراہ میں نے کہاکہ یہ دواور تین ججوں کا اکثریتی فیصلہ ہے۔فیصلہ 540صفحات پرمشتمل ہے جس میں جسٹس آصف سعید کھوسہ اور جسٹس گلزار احمد کے اختلافی نوٹ بھی شامل ہیں ۔فیصلہ جسٹس اعجاز افضل نے تحریر کیا۔
جسٹس آصف سعید کھوسہ نے تمام فریقین کی جانب سے مقدمے کی سماعت کے دوران صبر وتحمل کا مظاہرہ کرنے کے عمل کو سراہا ۔

ٹیم ہر دو ہفتے بعد اس حوالے سے قائم کیے جانے والے عدالت کے نئے بنچ کو اپنی رپورٹ پیش کرے گی ۔
ٹیم اپنی تحقیقات کی تکمیل کے بعد اپنی تشکیل کی تاریخ سے ساٹھ دن کے اندر بنچ کو اپنی حتمی رپورٹ پیش کرے گی ۔
بنچ آج کے فیصلے پر عملدرآمد یقینی بنائے گا۔
جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کہا کہ آج کا فیصلہ دو کے مقابلے میں تین ووٹ کی اکثریت سے دیا گیا ہے۔
فیصلہ پانچ سو انچاس صفحات پرمشتمل ہے اور اس میں جسٹس آصف سعید کھوسہ اور جسٹس گلزار احمد کے اختلافی نوٹ بھی شامل ہیں، فیصلہ جسٹس اعجاز افضل نے تحریر کیا ہے۔
جسٹس آصف سعید کھوسہ نے کیس کی سماعت کے دوران صبروتحمل کامظاہرہ کرنے پر تمام جماعتوں کی تعریف کی۔