Monday, 21 May 2018, 07:59:22 pm
مقبوضہ کشمیر ، طلبا پر طاقت کے وحشیانہ استعمال کیخلاف احتجاج ، پلوامہ میں مکمل ہڑتال
April 19, 2018

مقبوضہ کشمیر میں کٹھوعہ کی آٹھ سالہ آصفہ بانو کی آبرو ریزی اور قتل کے المناک واقعے کے خلاف سرینگر اور دیگر تمام بڑے قصبوں میں آج بھی زبردست احتجاجی مظاہرے جاری رہے۔ بھارتی فوجیوں اور پولیس اہلکاروں کی طرف سے مظاہرین پر طاقت کے وحشیانہ استعمال کے نتیجے میں طلبہ سمیت بیسیوں افراد زخمی ہو گئے۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق مظاہرین نے کم سن بچی کے مجرموں کو کڑی سزا دینے کا مطالبہ کیا۔ مظاہرین نے آزادی کے حق میں اور بھارت کے خلاف فلک شگاف نعرے لگائے اور مختلف علاقوں میں پاکستانی جھنڈے لہرائے۔ بھارتی پولیس اور فوج کے اہلکاروں نے مختلف علاقوں میں مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے پیلٹ گن اور آنسو گیس کا بے دریغ استعمال کیاجس کے بعد فورسز اہلکاروں اور مظاہرین کے درمیان جھڑپیں شروع ہو گئیں۔بھارتی فورسز کی طرف سے گزشتہ روز طلبہ پر طاقت کے وحشیانہ استعما ل کیخلاف آج ضلع پلوامہ کے قصبے ترال میںمکمل ہڑتال کی گئی۔ دکانیں اور کاروباری مراکز بند رہے جبکہ سڑکوں پر ٹریفک کی آمد ورفت معطل تھی۔ ادھر کل جماعتی حریت کانفرنس کے غیر قانونی طورپر نظربند سینئر رہنماء مسرت عالم بٹ نے کہاہے کہ بھارت غیر قانونی نظر بندیوں، گرفتاریوں ، خوف و ہراس اور دیگر ظالمانہ ہتھکنڈوں سے کشمیریوں کے جذبہ حریت کو کمزور نہیں کرسکتا۔