سکھر میں آبپاشی کے حکام کی طرف سے سیلاب کے بارے میں بریفنگ کے موقع پر انہوں نے کہا کہ صوبے میں کسی بڑے سیلاب کا خدشہ نہیں۔

سندھ میں سیلاب کی ممکنہ صورتحال کے پیش نظر سخت اقدامات کئے گئے ہیں:قائم علی شاہ
18 ستمبر 2014 (12:26)
0

سندھ کے وزیراعلیٰ سید قائم علی شاہ نے کہا ہے کہ جن علاقوں میں سیلاب کا سنگین خطرہ ہے ان مقامات پر سخت اقدامات کئے گئے ہیں۔سکھر میں آبپاشی کے حکام کی طرف سے سیلاب کے بارے میں بریفنگ کے موقع پر انہوں نے کہا کہ صوبے میں کسی بڑے سیلاب کا خدشہ نہیں۔

جبکہ گدو بیراج کے دورے کے موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ چار سے پانچ لاکھ کیوسک پانی سندھ سے گزرے گا۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ کشمور،کندھ کوٹ، شکارپور، سکھر، خیرپور،نوشہرو فیروز، لاڑکانہ، بے نظیر آباد کے کچے علاقوں اور دریائے سندھ کے اردگرد دوسرے علاقوں میں رہائش پذیر افراد کو پہلے ہی محفوظ مقامات یا امدادی کیمپوں میں منتقل ہونے کیلئے کہا گیا ہے۔

دوسری جانب دریائے سندھ کے ساتھ واقع کچے کے علاقے کے لوگوں کو محفوظ مقامات یا امدادی کیمپوں میں منتقل کیاجارہاہے۔جبکہ گھوٹکی اورپنوں عاقل کے علاقے زیر آب آگئے ہیں۔
وزیراعلیٰ سید قائم علی شاہ نے تمام اضلاع کے ڈپٹی کمشنروں کو ہدایت کی کہ دریائے سندھ کے حفاظتی پشتوں کی نگرانی کیلئے ضروری انتظامات کئے جائیں۔


قدرتی آفات سے نمٹنے کے صوبائی ادارے کے ڈائریکٹر جنرل سلمان شاہ نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ متاثرہ علاقوں میں امدادی کاموں کیلئے ضلعی انتظامیہ سے قریبی رابطہ رکھا جائے۔