بحث میں حصہ لیتے ہوئے سینیٹر صالح شاہ نے کہاکہ جمہوریت ملک کے لئے حفاظتی دیوار ہے۔

پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں موجودہ سیاسی صورتحال پر بحث
18 ستمبر 2014 (12:47)
0

پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال پر بحث جاری ہے۔
بحث میں حصہ لیتے ہوئے سنیٹر محمد صالح شاہ نے کہا کہ سیاسی اختلافات کے باوجود حکومت اور حزب اختلاف کی جماعتوں نے جمہوریت کے استحکام اور فروغ کے لئے مثالی اتحاد کا مظاہرہ کیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ تمام سیاسی جماعتوں نے جمہوری نظام کے لئے گرانقدر قربانیاں دی ہیں اور کسی کو بھی نظام کو سبوتاژ کرنے کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔
انہوں نے موجودہ سیاسی بحران میں حکومت کی طرف سے ضبط وتحمل کا مظاہرہ کرنے کو سراہا
عبدالرحیم مندوخیل نے کہا کہ پارلیمنٹ بالادست ادارہ ہونے کی حیثیت سے آئین اور عوام کے حقوق کا تحفظ کرے گا ۔ انہوں نے دو ہزار تیرہ کے عام انتخابات میں دھاندلی کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ دھرنے دینے والوں کا وزیراعظم سے استعفیٰ کا مطالبہ جمہوری اور آئینی نہیں ہے۔

رشید گوڈیل نے موجودہ بحران کو جلد حل کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ اس سے معیشت بری طرح متاثر ہو رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاک فوج دہشت گردی کے خلاف جنگ میں مصروف ہے اور ہمیں اس کے ساتھ کھڑا ہونا چاہئیے۔
ایاز سومرو نے کہا کہ قومی اداروں پر حملے پوری قوم پر حملہ کرنے کے مترادف ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جن کے قول اور فعل میں تضاد ہو وہ غریب لوگوں کے رہنماء نہیں ہو سکتے۔

سپیکر قومی اسمبلی نے اجلاس کل (جمعہ )کی صبح 10:30بجے تک ملتوی کردیا ۔