مشیر خارجہ عدالتیں بعض اوقات ایسے حکم دیتی رہتی ہیں جن کا مقدمے کی طویل سماعت پر کوئی فرق نہیں پڑتا ۔

کلبھوشن کیس،عالمی عدالت کاحکم امتناعی غیر معمولی بات نہیں ہے،سرتاج
18 مئی 2017 (19:26)
0

مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے کہا ہے کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کے عبوری مقدمے میں عالمی عدالت انصاف کی طرف سے حکم امتناعی جاری کرنا کوئی غیر معمولی بات نہیں ہے۔

ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ عدالتیں بعض اوقات ایسے حکم دیتی رہتی ہیں جن کے مقدمے کی طویل سماعت پر کوئی فرق نہیں پڑتا۔
سرتاج عزیز نے کہا کہ یہ غلط تاثر ہے کہ وکیل کا انتخاب درست نہیں تھا۔
انہوں نے کہا کہ قونصلر رسائی کا معاملہ عدالت کے آپریشنل آرڈر میں شامل نہیں ہے، مشیر خارجہ نے کہا کہ ہمارا موقف یہ ہے کہ سیکورٹی وجوہات بھی بہت اہم ہیں۔