وزیر داخلہ نے کہا کہ علماء کرام اور ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کے ساتھ مشاورت کے دوران نیشنل ایکشن پلان پر تاریخی اتفاق رائے کیا گیا۔

مدارس،ذرائع ابلاغ دہشتگردی کے خلاف جنگ میں مکمل حمایت پر متفق:نثار
18 جنوری 2015 (13:58)
0

وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ مدارس اور ذرائع ابلاغ کے نمائندوں نے دہشتگردی اور انتہا پسندی کے خلاف جنگ میں حکومت کی مکمل حمایت پر اتفاق کیا ہے۔ 
وہ اسلام آباد میں مدارس اور ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے ملاقات کے بعد صحافیوں سے گفتگو کر رہے تھے۔


وزیر داخلہ نے کہا کہ علماء کرام اور ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کے ساتھ مشاورت کے دوران نیشنل ایکشن پلان پر تاریخی اتفاق رائے کیا گیا۔ چوہدری نثار نے کہا کہ یہ بات اطمینان بخش ہے کہ ملاقات کے دوران ہر شخص نے پاکستانی کے طور پر اظہار خیال کیا اور صورتحال کی نزاکت کو سمجھا۔ انہوں نے کہا کہ ہم پاکستان کا تحفظ کرنا چاہتے ہیں اور اسے مسائل سے پاک پُر امن ملک بنانا چاہتے ہیں۔

انہوں نے واضح کیا کہ جماعت اسلامی اور جمعیت علمائے اسلام کی قیادت نے پارلیمنٹ سے منظور کردہ 21 ویں ترمیم پر ایک بار پھر اعتماد کا اظہار کیا ہے۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ اس بات پر بھی اتفاق کیا گیا کہ وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقوں سمیت تمام مدارس کو طلباء کی مکمل تفصیلات کے ساتھ رجسٹر کیا جائے۔

چوہدری نثار نے ذرائع ابلاغ پر زور دیا کہ وہ دہشتگردی کے خلاف طویل جنگ میں ملک کی حمایت کیلئے اپنی طاقت استعمال کرے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں ہر حال میں یہ جنگ جیتنا ہوگی کیونکہ ملک کی بقاء کا انحصار دہشتگردوں کو شکست دینے میں ہی ہے۔

 

وزیر داخلہ نے کہا کہ اجلاس میں فرانسیسی رسالے میں توہین آمیز خاکوں کی اشاعت کے خلاف ایک تاریخی متفقہ قرارداد بھی منظور کی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم توہین آمیز خاکوں کی اشاعت کی شدید مذمت کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ توہین آمیز خاکے بنانے والے عناصر دہشتگردی کے مسئلے کو مزید ہوا دے رہے ہیں۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ مہذب اور جمہوری ممالک کو اس صورتحال کو محض اپنے نقطہ نظر سے نہیں دیکھنا چاہیے بلکہ انہیں مسلمان شخصیات کی بے حرمتی سے پہنچنے والے دُکھ پر اسلام کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرنا چاہیے۔