وفاقی اور صوبائی حکومتوں سے اس مذموم کارروائی میں ملوث ملزموں کے خلاف سخت کارروائی کا مطالبہ کیاگیا ہے۔

قومی اسمبلی :مشعال خان کے بے رحمانہ قتل پرمذمتی قرار دادمنظور
18 اپریل 2017 (13:19)
0

قومی اسمبلی نے آج ایک قرارداد کی منظوری دی ہے جس میں عبدالولی خان یونیورسٹی مردان میں مشعال خان کے بے رحمانہ قتل کی شدید مذمت کی گئی۔

یہ قرارداد وفاقی وزیر رانا تنویر حسین نے پیش کی جس میں وفاقی اور صوبائی حکومتوں سے مطالبہ کیاگیا کہ وہ اس مذموم کارروائی میں ملوث ملزموں اور سہولت کاروں سمیت نفرت آمیز تقریر یں کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کریں۔
قرارداد میں اس عزم کااظہار کیاگیا کہ توہین رسالت کے قانون کو مزید موثر بنانے پر زوردیا گیا تاکہ اس قسم کے واقعات کو روکا جاسکے قرارداد میں ان لوگوں کی مذمت کی گئی جو قانون کوہاتھ میں لیتے ہیں جس سے قیمتی جانوں کا نقصان ہوتا ہے ۔

جبکہ نکتہ اعتراض پر اظہارخیال کرتے ہوئے قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے کہا کہ سیاسی جماعتوں نے ملک میں جمہوریت کی بحالی کیلئے بڑی قربانیاں دی ہیں ۔انہوں نے کہاکہ ہم جمہوری نظام میں تسلسل اور پارلیمنٹ کی مضبوطی چاہتے ہیں ۔خورشید شاہ نے کہاکہ حزب اختلاف عدلیہ سمیت تمام اداروں کی مضبوطی چاہتی ہے۔انہوں نے کہاکہ حکومت عوام کو درپیش مسائل کے حل میں سنجیدہ نظر نہیں آرہی ۔
خورشید شاہ نے ملک میں بجلی کی لوڈشیڈنگ اورپانی کی قلت پرتشویش ظاہر کی ہے ۔انہوں نے حکومت سے کہاکہ وہ عوام کے مسائل حل کرے ۔
پاکستان پیپلزپارٹی نے پارٹی کارکنوں کے لاپتہ ہونے پر ایوان سے واک آوٹ کیا۔

قائد حزب اختلاف کے نکات اعتراض کا جواب دیتے ہوئے پارلیمانی امور کے وزیر شیخ آفتاب نے کہاکہ حکومت مضبوط جمہوری نظام پریقین رکھتی ہے انہوں نے کہاکہ حزب اختلاف کی طرح ہم نے بھی پارلیمنٹ کا تقدس برقراررکھا ہے۔کورم پورا نہ ہونے کے باعث ایوان کی کارروائی معطل کردی گئی ہے ۔


comments powered by Disqus