Friday, 18 October 2019, 11:05:40 am
پارلیمنٹیرینز کانفرنس کا بھارت سے مقبوضہ کشمیر میں کرفیو ہٹانے،مواصلاتی ذرائع کی بحالی کا مطالبہ
September 18, 2019

آج اسلام آباد میں کشمیر کے بارے میں ملک کے ارکان پارلیمنٹ کی کانفرنس نے متفقہ طورپر ایک اعلامیے کی منظوری دی جس میں بھارت سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں کرفیو ہٹا کر پرتشدد کارروائیاں بند کرے اور مواصلاتی ذرائع پر پابندیاں ختم کرے ۔اعلامیے میں اقوام متحدہ پرزوردیا گیا کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں حقائق معلوم کرانے کیلئے بین الاقوامی ذرائع ابلاغ اور انسانی حقوق کی تنظیموں کو علاقے میں جانے کی اجازت دینے کیلئے بھارت پردبائو ڈالے ۔اعلامیے میں بھارت سے مطالبہ کیاگیا کہ وہ کشمیریوں کو حق خودارادیت دے جس کا وعدہ ان سے اقوام متحدہ نے کیا ہے ۔اعلامیے میں تمام ممالک پرزوردیا گیاکہ وہ مقبوضہ کشمیر میں بے گناہ کشمیریوں پرجاری بھارتی مظالم کی اصل صورتحال معلوم کرانے کیلئے اپنے پارلیمانی وفود کوعلاقے سے بھیج دیں ۔

کانفرنس نے مقبوضہ جموں وکشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں اور کشمیری عوام پر مظالم کے تناظر میں انسانی حقوق کے آفاقی اعلامیے کا حوالہ دیا جس میں عظمت، مساوات اور مساوی حقوق کو آزادی، انصاف اور امن کی بنیاد قرار دیا گیا ہے۔اس میں تنازعہ کشمیر پر عالمی برادری، اقوام متحدہ کے اداروں، انسانی حقوق کے گروپوں، یورپی یونین، اسلامی تعاون تنظیم، چین، ایران، ترکی اور امریکہ اور برطانیہ کے ارکان پارلیمنٹ کی جانب سے حمایت کا بھی اعتراف کیا گیا۔