Tuesday, 25 June 2019, 10:48:09 am
بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی،3کشمیری شہید
February 18, 2019

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوجیوں نے اپنی ریاستی دہشتگردی کی تازہ کارروائی کے دوران آج ضلع پلوامہ میں تین کشمیریوںکوشہید کردیا ۔

ان نوجوانوں کو ضلع کے علاقے پنگلنہ میں تلاشی کی ایک کارروائی کے دوران شہید کیا۔نوجوانوں کی شہادت پر علاقے میں بھارتی فورسز اہلکاروں اور احتجاجی مظاہرین کے درمیان جھڑپیں ہوئیں۔تحریک حریت جموںوکشمیر کے چیئرمین محمد اشرف صحرائی اور دیگر حریت رہنمائوں نے اپنے بیانات میں شہید نوجوانوں کو شاندار خراج عقیدت پیش کیا ہے۔ضلع پلوامہ کے اسی علاقے میں ایک حملے میں ایک افسرسمیت بھارتی فوج کے پانچ اہلکار ہلاک ہوگئے۔ کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں بھارت کی طرف سے جموں میں مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم کی شدید مذمت کی ہے۔انہوں نے حکام سے کہاکہ دھمکیوں اورتشدد کے تمام الزامات کی تحقیقات کریں اور ذمہ داروں کوانصاف کے کٹہرے میں لائیں۔ ہندو بلوائیوں کے حملوں سے بچنے کے لیے 6 ہزار سے زائد کشمیری مسلمانوں نے ضلع جموں کی مختلف مساجد میں پنا ہ لے رکھی ہے۔ انسانی حقوق کی عالمی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل نے بھارتی حکومت پر زوردیا ہے کہ وہ اس بات کو یقینی بنائے کہ پلوامہ حملے کے ردعمل میں کشمیریوں پر حملے نہ ہوں، انہیں ہراساں اور گرفتار نہ کیا جائے۔ بھارت میں ایمنسٹی کے سربراہ آکار پٹیل نے ایک بیان میںکہاکہ شمالی بھارت کی ریاستوں بالخصوص اترا کھنڈ، ہریانہ اور بہار میں یونیورسٹیوں میں زیر تعلیم کشمیری طلباء اور تاجروں کو ہندو قوم پرستوں نے تشدد کا نشانہ بنایا اور انہیں ہراساں کیا ہے۔