پارلیمانی سیکرٹری داخلہ نے کہاہے کہ سلامتی کی صورتحال کاجائزہ لینے اورنیشنل ایکشن پلان پرعملدرآمد کیلئے صوبائی اپیکس کمیٹی کا اجلاس ہر ماہ ہوتا ہے۔

نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد سے ملک میں امن و امان کی مجموعی صورتحال میں بہتری آئی ہے:ڈاکٹر افضل
17 مئی 2017 (13:43)
0

قومی اسمبلی کو آج بتایاگیا کہ دہشت گردی کے بارے میں نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد سے ملک میںامن و امان کی مجموعی صورتحال میں بہتری آئی ہے ۔داخلہ کے پارلیمانی سیکرٹری ڈاکٹر محمدافضل دھاندلہ نے وقفہ سے سوالات کے دوران ایوان کو بتایا کہ سلامتی کی صورتال کاجائزہ لینے اورنیشنل ایکشن پلان پرعملدرآمدیقینی بنانے کیلئے صوبائی اپیکس کمیٹی کا اجلاس ہر ماہ ہوتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ افغان پناہ گزینوں کی ان کے ملک جلد واپسی کیلئے کوششیں کی جارہی ہیں۔
خزانہ کے پارلیمانی سیکرٹری رانا محمدافضل خان نے ایوان کو بتایا کہ جاری مردم شماری میں بے روزگاری سے متعلق معلومات اکٹھی کی جارہی ہے ۔انہوںنے کہاکہ یہ اعداد و شمار وفاقی اورصوبائی حکومتوں کیلئے روزگار کے مواقع پیدا کرنے کے حوالے سے اقدامات کرنے میں معاون ثابت ہوں گے۔
منصوبہ بندی و ترقی کے پارلیمانی سیکرٹری ڈاکٹر عباد اللہ نے کہاکہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کے تحت بلوچستان کا توانائی کا کوئی منصوبہ ختم نہیں کیا گیا انہوںنے کہاکہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کے تحت تمام صوبوں میں خصوصی اقتصادی زونز قائم کئے جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ راہداری کے تحت شاہراہوں کے منصوبے اگلے دوسال میں جبکہ جلد شروع شروع کئے جانے والے توانائی کے منصوبے ایک سال میں مکمل ہوںگے۔

خزانہ کے پارلیمانی سیکرٹری رانا محمد افضل خان نے ایوان کو بتایا کہ نقصان میں چلنے والے اداروں کی نجکاری کی جائے گی انہوںنے کہا کہ گزشتہ چند سال میں محاصل میں اضافہ ہواہے اورمعیشت بہتری کی جانب گامزن ہے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت کی طرف سے 13 ارب 60 کروڑ ڈالر سے زیادہ بیرونی قرضوں کی ادائیگی کے باوجود اس وقت زرمبادلہ کے ذخائر اکیس ارب پچاس کروڑ ڈالر ہیں۔

قائد حزب اختلاف سید خورشید احمد شاہ نے کہاہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی فاٹا کو خیبرپختونخوا میں ضم کرنے کی حمایت کرتی ہے ۔آج قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ قبائلی عوام کی خواہشات کے مطابق کیا جانا چاہیے۔

خالدہ منصور اوردوسرے ارکان کے توجہ دلائو نوٹس کا جواب دیتے ہوئے ہائوسنگ وتعمیرات کے پارلیمانی سیکرٹری سید ساجد مہدی نے کہاکہ بہارہ کہو ہائوسنگ سکیم پر کام شروع کرنے کیلئے کوششیں جاری ہیں۔انہوں نے کہا کہ ٹھیکیدار کی وجہ سے وفاقی ملازمین کیلئے یہ سکیم تاخیر کا شکار ہوئی ہے انہوں نے کہا کہ ٹھیکیدار کیخلاف کارروائی کیلئے نیب کو بھی شامل کیاگیا ہے ۔سید مہدی نے کہا کہ موجودہ حکومت نے وفاقی ملازمین کیلئے کئی منصوبے شروع کئے ہیں۔
سید نوید قمر اوردوسرے ارکان کے ایک اور توجہ دلائو نوٹس کا جواب دیتے ہوئے خزانہ کے پارلیمانی سیکرٹری رانا محمد افضل خان نے ایوان کو بتایا کہ وزیراعظم کے پروگرام کے تحت نوجوانوں کوطے شدہ طریقہ کار کے مطابق قرضے دئیے جارہے ہیں،انہوں نے کہاکہ 2013 میں پروگرام بے روزگار نوجوانوں کیلئے شروع کیاگیا۔
زرعی قرضوں کے حوالے سے انہوں نے کہاکہ حکومت نے اس مقصد کیلئے رواں مالی سال کے دوران پانچ سو ارب روپے کی منظوری دی۔

بلز
ایوان نے آج دو بلوں کی منظوری بھی دی۔ ان میں نیشنل سکول آف پبلک پالیسی(ترمیمی) بل 2017 اور میرین انشورنس بل2017شامل ہیں۔یہ بل وزیر قانون زاہد حامد نے پیش کئے۔

ایوان کا اجلاس کل صبح ساڑھے دس بجے تک ملتوی کردیا گیا ہے ۔