17 مئی 2017 (11:06)
0

وزیراعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ پاکستان سرمایہ کاری کیلئے انتہائی پرکشش مقام ہے اور دنیا کا کوئی ملک اسے نظر انداز کرنے کا متحمل نہیں ہوسکتا۔وہ بدھ کے روز ہانگ کانگ میں ایک خطہ ایک سڑک سرمایہ کاری فورم میں اظہار خیال کررہے تھے۔ وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان انسانی اور قدرتی وسائل سے مالا مال اہم جغرافیائی محل وقوع اورسیاسی استحکام کا حامل آبادی کے لحاظ سے دنیا کا چھٹا بڑا ملک ہے جہاں متوسط طبقے میں اضافہ ہورہا ہے۔نوازشریف نے سرمایہ کاروں پر زور دیا کہ وہ پاکستان کی اقتصادی بحالی اورابتدائی سرمایہ کاری پر دی جانے والی مراعات سے فائدہ اٹھائیں۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان دنیا کے ساتھ تجارتی روابط استوار کرنے کو تیار ہے۔
وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان توانائی کے شعبے میں خودکفیل وسطی ایشیا تیل کے ذخائر سے مالامال خلیجی ملکوں اور معاشی لحاظ سے ترقی یافتہ مشرقی بعید کیلئے ایک راہداری ہے، انہوں نے کہا کہ پاکستان اقتصادی انقلاب کے دہانے پر کھڑا ہے جس سے سب کیلئے یکساں مواقع پیدا ہوں گے۔انہوں نے کہا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کا مقصد روابط کو فروغ دینا اور خطے اور اس سے باہر تمام ملکوں کیلئے اجتماعی خوشحالی کا حصول ہے۔انہوں نے کہا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری مسافت کم کرکے افریقہ اور مشرق وسطی کو وسطی اورجنوبی ایشیائی خطوں کے قریب لائے گی۔
نواز شریف نے کہاکہ گوادر بندرگاہ کو کاشغر سے منسلک کرنے سے نہ صرف چین اور پاکستان آپس میں ملیں گے بلکہ یہ پورے وسطی ایشیا کے خطے حتی کہ یورپ کیلئے بھی رابطہ فراہم کرے گی۔

وزیراعظم نے کہا کہ اقتصادی راہداری کے ساتھ ساتھ 9 خصوصی اقتصادی زونز قائم کئے جارہے ہیں تاکہ غیرملکی کمپنیاں پاکستانی منڈی میں کھپت اوربرآمدات کے لئے فیکٹریوں ،گوداموں اور سامان کے ترسیلی مراکز میں سرمایہ کاری کرسکیں۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے سرمایہ کار دوست ماحول پید ا کرنے کیلئے جامع منصوبہ تیار کیا ہے ہم نے براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری کو راغب کرنے کے لئے آزادانہ سرمایہ کار پالیسیاں ترتیب دی ہیں اور نئی سرمایہ کاری کیلئے مراعات کی پیش کش کی ہیں جن میں ٹیکس کی چھوٹ، نرخوں میں کمی اورسرمایہ کاری کیلئے سہولتی خدمات شامل ہیں، انہوں نے کہاکہ پاکستان کی سرمایہ کار پالیسی میں کاروبار کی لاگت کم کرنے پر توجہ مرکوز کی گئی ہے۔

اس سے پہلے پاکستان اور ہانگ کانگ نے دوطرفہ معاشی اور تجارتی تعلقات کو فروغ دینے سے اتفاق کیا ہے۔یہ اتفاق رائے آج ہانگ کانگ میں وزیراعظم محمد نواز شریف اورہانگ کانگ کے چیف ایگزیکٹوLeung Chun Ying کے درمیان ملاقات میں طے پایا۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان کی آزادانہ تجارتی پالیسی سرمایہ کاروں کو بے پناہ مواقع فراہم کرتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان اورہانگ کانگ کے درمیان مضبوط تجارتی تعلقات ہیں جنہیں مزید مضبوط بنانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے ہانگ کانگ کے تاجروں پر زوردیا کہ وہ چین پاکستان اقتصادی راہداری میں سرمایہ کاری کریں۔