وزیر داخلہ نےکہاکہ دہشت گرد امام بارگاہوں اور اقلیتی گروپوں پر حملوں کے ذریعے فرقہ وارانہ فسادات اور لاقانونیت پھیلانا چاہتے ہیں

چوہدری نثارکاقوم پردہشتگردی کے خلاف جنگ میں متحد رہنے پرزور
17 مارچ 2015 (15:38)
0

وزیرداخلہ چوہدری نثار علی خان نے قوم پر زور دیا ہے کہ وہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں متحد اور ثابت قدم رہے۔آج قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے لاہور میں گرجا گھروں پر خودکش حملے کے بعد دو افراد کو جلائے جانے اور سرکاری املاک کی توڑ پھوڑ کئے جانے کے واقعات پر انتہائی افسوس کا اظہار کیا۔انہوں نے کہا کہ دہشت گرد امام بارگاہوں اور اقلیتی گروپوں پر حملوں کے ذریعے فرقہ وارانہ فسادات اور لاقانونیت پھیلانا چاہتے ہیں اور یہ ہماری ذمہ داری ہے کہ کسی بھی دہشت گرد حملے ردعمل میں اتحاد اور پختہ عزم کا مظاہرہ کریں۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ دہشت گردوں کے گرد گھیرا تنگ کر دیا گیا ہے اور وہ شدید دباؤ کے باعث مساجد اور گرجا گھروں سمیت آسان اہداف کو نشانہ بنا رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ حکومت کی موثر پالیسی کے نتیجے میں گزشتہ ڈیڑھ سال کے دوران ملک میں امن وامان کی مجموعی صورتحال بہتر ہوئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ ہر قیمت پر جیتی جائے گی اور ملک کو امن کا گہوارہ بنایا جائے گا۔


سانحہ شکار پور کی تحقیقات کے بارے میں ایوان کو اعتماد میں لیتے ہوئے چوہدری نثار علی خان نے کہا کہ انٹیلی جنس اور سیکورٹی اداروں کے قریبی تعاون سے اس سانحے کے دو اہم ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا ہے اور اس سانحہ کے پس پردہ عناصر بھی سیکورٹی اداروں کی ٹارگٹ لسٹ پر ہیں۔بعد میں ارکان نے مسیحوں پر حملوں کو افسوسناک قرار دیتے ہوئے کہا کہ ان حملوں میں ملوث عناصر کو گرفتار کیا جائے اور ان کے مقدمات خصوصی عدالتوں کو بھیجے جائیں۔