وزیراعلیٰ پنجاب نے کہاکہ جے آئی ٹی کے سامنے پانامہ مقدمے کے حوالے سے اپنا موقف عاجزی کے ساتھ پیش کردیا ۔

17 جون 2017 (03:48)
0

وزیراعلیٰ پنجاب اسلام آباد میں پانامہ پیپرز کیس کی تحقیقات کرنے والی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سامنے بیان قلمبند کرایا ہے۔پنجاب کے وزیراعلیٰ شہباز شریف آج فیڈرل جوڈیشل اکیڈمی میں جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوئے جہاں وہ تقریباًساڑھے تین گھنٹے زائد وقت تک موجود رہے اور انہوں نے تحقیقاتی ٹیم کے سوالوں کے جواب بھی دیئے ۔
وزیر اعلیٰ پنجاب نے جوڈیشل اکیڈمی سے باہرآمدپر ذرائع ابلاغ سے گفتگو بھی کی جس دوران انہوں نے کہاکہ جے آئی ٹی کے سامنے پانامہ مقدمے کے حوالے سے اپنا موقف عاجزی کے ساتھ پیش کردیا ۔انہوں نے کہاکہ ہمارا پانچویں مرتبہ احتساب کیا جارہاہے ، 1993اور 96میں پیپلزپارٹی کی حکومت نے ہمارا احتساب کیا ۔پرویز مشرف کے دور میں ہمارا احتساب کیاگیا ۔میری اور وزیراعظم کی پیشی سے ثابت ہوگیا کہ منتخب سیاستدانوں کے دلوں میں قانون کا احترام ہے۔انہوں نے کہاکہ کمر کے عارضے کے باوجو دمیں نے کمر کی تکلیف کا بہانہ نہیںبنایا۔ شہباز شریف نے کہاکہ ترقیاتی منصوبوں میں قوم کے اربوں روپے بچائے ۔انہوں نے کہاکہ ہمارے خاندان کا کاروبار تباہ کرنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی گئی ۔