وزیراعظم کی پشاور میں دہشت گردی کے حملے کی سخت مذمت
17 جولائی 2017 (10:24)
0

پشاور کے علاقے حیات آباد میں باغ ناران کے قریب آج صبح ایک موٹرسائیکل سوار خودکش حملہ آور نے فرنٹیر کور کی گاڑی کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں ایف سی کے ایک افسر میجر جمال شیران شہید اور تین ایف سی اہلکاروں سمیت سات افراد زخمی ہوگئے۔وزیراعظم محمد نوازشریف نے حملے کی شدید مذمت کی ہے۔
انہوں نے میجر جمال شیران کی شہادت کے واقعہ پر گہرے دکھ و افسوس کااظہار کیا اور ان کے درجات کی بلندی اور اہل خانہ کو اس صدمہ کو برداشت کرنے کا حوصلہ عطا کرنے کی دعا مانگی۔
وزیراعظم نے کہا کہ دہشت گرد ی کے حملوں میں ملوث عناصر کسی رحم کے مستحق نہیں اوردہشت گردی اور عسکریت پسندی کے خلاف پوری قوم کے غیر متزلزل عزم کے باعث وہ جلد اپنے انجام کو پہنچیں گے۔
انہوں نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ وہ اس گھنائونی کارروائی میںملوث عناصر کو پکڑ کر انصاف کے کٹہرے میں لائیں۔ انہوں نے صوبائی حکومت کو زخمیوں کو بہترین طبی سہولتیں فراہم کرنے کی ہدایت بھی کی۔
وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان ،پنجاب کے وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف اور خیبرپختونخوا کے گورنر اقبال ظفر جھگڑا نے بھی حملے کی مذمت اور شہید میجر کے درجات کی بلندی کیلئے دعا کی۔