وفاقی وزیر قانون نے کہا ہے کہ اس بل کے ذریعے ہندو برادری کی شادیوں کو قانونی حیثیت مل جائے گی۔

سینیٹ نے ہندوؤں کی شادی کے بل 2016 کی منظوری دیدی
17 فروری 2017 (14:37)
0

سینٹ نے آج ہندوؤں کی شادی کے بل 2016 کی منظوری دی ۔ یہ بل وزیرقانون زاہد حامد نے پیش کیا تھا۔ بل کے تحت ہندو برادری کی شادیوں کو قانونی حیثیت دی گئی ہے۔
وفاقی وزیر نے کہا کہ اس بل کے ذریعے ہندو برادری کی شادیوں کو قانونی حیثیت مل جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ اس سے پہلے ہندو برادری کی شادی کے حوالے سے کوئی دستاویز نہیں تھی۔ انہوں نے کہا کہ اس بل کو ہندو برادری ، قومی اسمبلی کے ارکان اور دوسرے حلقوں کی مکمل حمایت حاصل ہے۔
وفاقی وزیر نے ایوان میں مزید تین بل پیش کئے جن میں کمپنیوں کا بل 2017 ، پاکستان ائرفورس ترمیمی بل2017 اور بچوں کے حقوق کے بارے میں قومی کمیشن کا بل 2017 شامل ہیں۔
چیئرمین نے یہ بل مزید غور کے لئے متعلقہ کمیٹیوں کو بھیج دئیے۔