مشیر خارجہ نے کہاہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان مذاکرات کے ذریعے کشمیری عوام کی خواہشات اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کیا جانا چاہئے۔

پاکستان مسئلہ کشمیر مذاکرات کے ذریعے حل کرنے کو تیار ہے:سرتاج عزیز
17 اگست 2016 (10:33)
0

مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے کہا ہے کہ پاکستان مسئلہ کشمیر مذاکرات کے ذریعے حل کرنے کو تیار ہے تاہم بھارت اس بنیادی مسئلے کو مکمل طور پر نظر انداز کرکے اپنا عہد پورا نہیں کررہا۔انہوں نے ایک انٹرویو میں کہا کہ دنیا مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے پاکستان کی جانب سے مذاکرات کی پیشکش کی حمایت کرتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کیلئے کشمیر ایک بنیادی تنازعہ ہے اور اسے پاکستان اور بھارت کے درمیان مذاکرات کے ذریعے کشمیری عوام کی خواہشات اور اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کیا جانا چاہئے۔انہوں نے کہا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر کو اپنا اٹوٹ انگ قراردے کر اس مسئلے کو نظر انداز کررہا ہے جس سے صورتحال کشیدہ ہوگئی۔
ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں تقریباً سات لاکھ فوجی تعینات کررکھے ہیں اور بے گناہ کشمیری عوام پر مظالم کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے جنہوں نے بھارت کے جبر واستبداد کے خلاف تحریک کا آغاز کیا۔
مشیر خارجہ نے بلوچستان کے بارے میں بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے بیان کو بھی دو ٹوک الفاظ میں مسترد کردیا۔