Saturday, 24 October 2020, 08:17:14 pm
پاکستان نے بھارتی وزیر خارجہ کی بلا جواز اور روایتی ہرزہ سرائی کو مسترد کردیا
October 17, 2020

فائل فوٹو

پاکستان نے بھارت کے وزیر خارجہ کی بلا جواز اور روایتی ہرزہ سرائی کو مسترد کردیا ہے جس میں دوطرفہ تعلقات کی موجودہ صورتحال کا ذمہ دار پاکستان کو قرار دیا گیا ہے۔

دفتر خارجہ کے ترجمان زاہد حفیظ نے ہفتے کے روز ایک بیان میں صحافیوں کے سوالوں کے جواب دیتے ہوئے کہا کہ یہ بیان بھارت کے قابل مذمت رویے کی عکاسی کرتا ہے جس کے تحت اس نے مقبوضہ کشمیر میں غیر قانونی اور یکطرفہ اقدامات کیلئے اور نہتے کشمیریوں کے خلاف انسانی حقوق کی سنگین اور منظم خلاف ورزیاں کیں۔
ترجمان نے کہا کہ جعلی مقابلوں اور تلاشی اور محاصرے کی کارروائیوں کے دوران شہید کئے گئے نہتے کشمیری نوجوانوں ، خواتین اور بچوں کو دہشتگرد قرار دینا بھارتی قیادت کے ڈھونگ اور اخلاقی دیوالیہ پن کی عکاسی کرتا ہے۔
انہوں نے کہا کہ تجارت اور روابط کے نام نہاد دعوے داروں کو دنیا کو یہ بھی بتانا چاہئے کہ کون علاقائی تعاون اور سارک کے عمل کو سبوتاژ کررہا ہے جس کا آئندہ سربراہ اجلاس 2016ء کے بعد اب تک نہیں ہو سکا۔
انہوں نے کہا کہ یہ راشٹریہ سوائم سیوک سنگھ اور بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت کی ہندوتوا اور اکھنڈ بھارت کی خطرناک پالیسیاں ہیں جن کی وجہ سے کشمیریوں کو مسلسل ہدف بنایا جارہا ہے اور بھارت میں اقلیتوں پر عرصہ حیات تنگ کیا جا رہا ہے۔اس کے علاوہ بھارت کے تمام قریبی ہمسایہ ممالک کیلئے مسائل پیدا کئے جارہے ہیں۔