Saturday, 24 August 2019, 04:57:09 pm
ہواوے کمپنی پاکستان میں آئی ٹی کے منصوبے شروع کرنے میں معاونت کرسکتی ہے، خسرو
July 17, 2019

منصوبہ بندی ، ترقی اور اصلاحات کے وزیر مخدوم خسرو بختیار نے پاکستان کے ساتھ ہوا وے کی مسلسل وابستگی کی تعریف کرتے ہوئے کہاکہ یہ ممتاز کمپنی پاکستان میں ائی ٹی کی ترقی کے شعبے کی ترقی اور اسے بہتر بنانے میں مدد سے سکتی ہے ۔

انہوں نے ہواوے گروپ کے نائب صدر مسٹر مارک XUEMAN سے گفتگو کرتے ہوئے جنہوں نے بدھ کے روز اسلام آباد میں ایک وفد کے ہمراہ ان سے ملاقات کی کہا کہ پاکستان کی موبائل صنعت میں ہواوے کا پچیس فیصد حصہ ہے اور یہ ملک میں سب سے زیادہ ٹیکس ادا کرنے والی چینی کمپنی ہے ۔

وفاقی وزیر نے جدید ترین انفارمیشن اورمواصلاتی ٹیکنالوجی آلات پرمشتمل انفارمیشن سمارت سکول پروجیکٹ کے تحت ہوا وے کمپنی کے اعلی تعلیمی کمیشن کے ساتھ اشتراک کوسراہا ۔

انہوں نے پاکستان میں آئندہ منصوبوں اور مشترکہ پروگراموں کیلئے نئے کاروباری معاہدے کرنے کی ضرورت پر زوردیا ۔

انہوں نے کہاکہ ہوا وے حکومت کے ای گورنمنٹ اقدام میں کردار ادا کرسکتی ہے اوراس کے ساتھ ساتھ کارکردگی میں بہتری کیلئے اعدادوشمار یکجا کرنے میں مدد سے سکتی ہے ۔

وزیر نے کہاکہ ہوا وے پاکستان میں آئی ٹی کے منصوبے شروع کرنے میں معاونت کرسکتی ہے تاکہ نوجوان اس اہم شعبے سے فائدہ اٹھاسکیں۔

ہوا وے کے نائب صدر نے کہاکہ پاکستان ایک سٹرٹیجک مارکیٹ ہے اور کہاکہ کمپنی اس سال ملک میں تقریباً دس کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری کرے گی ۔

انہوں نے بتایا کہ ہوا وے اسلام آباد میں پانچ کروڑ پچاس لاکھ روپے کی لاگت سے علاقائی ہیڈ کوارٹر بھی قائم کرے گی جس سے ملک میں نوجوان انجینئروں کیلئے روزگار کے مواقع پیداہوںگے۔

انہوں نے کہاکہ ہوا وے پاکستان میں اپنے تکنیکی معاونت کے مرکز میں بھی ڈیڑھ کروڑ ڈالر کی سرمایہ کاری کرے گی اور اس طرح وہ مزید افرادی قوت کی خدمات بھی حاصل کرے گی جس سے اس سال اس کے عملے کی تعداد چھ سو سے بڑھ کر آٹھ سو ہوجائے گی۔