پاکستان اور امریکہ کادھماکہ خیز مواد کے خطرے سے نمٹنے کیلئے مشترکہ کوششیں کرنے پر اتفاق
16 ستمبر 2017 (11:34)
0

پاکستان اور امریکہ نے دھماکہ خیز مواد کے خطرے سے نمٹنے کیلئے مشترکہ کوششیں کرنے پر اتفاق کیا ہے ۔
یہ اتفاق رائے امریکہ کے محکمہ دفاع کے دھماکہ خیز مواد کے خطرے سے نمٹنے کے ادارے کے ڈائریکٹر لیفٹیننٹ جنرل MICHEAL SHIELDS کے پاکستان کے دورے کے دوران طے پایا ۔
پاکستان کے دورے میں لیفٹیننٹ جنرل MICHEAL SHIELDS اور ان کے وفد نے پاک فوج کے چیف آف جنرل سٹاف ، ڈائریکٹر جنرل آف ملٹری آپریشنز اوروزارت داخلہ کے حکام سے ملاقاتیں کیں۔
انہوں نے پاک فوج کے دھماکہ خیز مواد کی روک تھام کے ادارے کے چیئرمین سے بھی ملاقات کی اوردونوں ملکوں کے درمیان تربیت اورفوج کے دوسروں شعبوں میں تعاون سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا ۔
جنرل شیلڈز نے رسالپور میں ملٹری کالج آف انجینئرنگ کے آئی ای ڈی، دھماکہ خیز مواد اور گولہ بارود کی روک تھام کے سکول کا دورہ بھی کیا۔
ملٹری کالج آف انجینئرنگ کے کمانڈر نے جنرل شیلڈز کو ہنگامی حالات میں میدان جنگ اوردوسرے خطرات کے دوران دھماکہ خیز مواد کی نشاندہی اور انھیں ناکارہ بنانے میں فوجیوںکی تربیت کیلئے کئے گئے اقدامات کے بارے میں بریفنگ دی۔
اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے جنرل شیلڈز نے کہا کہ دھماکہ خیز مواد کا خطرہ ایک پچیدہ مسئلہ ہے جس کا خاتمہ ہماری مشترکہ کوششوں کا تقاضا کرتا ہے ۔