بھارت کے غیر قانون قبضے اور قابض افواج کے مظالم کیخلاف ہڑتال
16 نومبر 2016 (19:43)
0

مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے غیر قانونی قبضے اورقابض فورسز کے مظالم کے خلاف ہڑتال کے باعث آج مسلسل 131ویں روز بھی معمول کی زندگی متاثر رہی۔
مشترکہ حریت قیادت نے بھارت کے خلاف ہڑتال کی اپیل کی تھی۔
سرینگر اور دیگر اضلاع میں تمام تعلیمی اور کاروبار ی ادارے بند رہے جبکہ سڑکوں پر ٹریفک معطل رہی۔
کل جماعتی حریت کانفرنس نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں ایک 21سالہ نوجوان کے قتل اور اسکے جنازے پر شیلنگ کی مذمت کی۔
کل جماعتی حریت کانفرنس کے سینئر رہنماآغا سید حسن الموسوی الصفوی نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں راشٹریہ سوائم سیوک سنگھ کے سربراہ موہن بھگوت کے حالیہ بیان پر کڑی تنقید کی جس میں انہوں نے کہا تھا کہ بھارت ایک ہندو ریاست ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس بیان نے نام نہاد سیکولر بھارت کے چہرے سے پوری طرح نقاب اتار دیا ہے ۔
ادھرضلع بارہمولہ میں ایک حملے میں بھارتی پولیس کے سپیشل آپریشن گروپ سے تعلق رکھنے والا ایک اہلکار ہلاک ہوگیا۔
ورلڈ کشمیر اویئر نس کے سیکریٹری جنرل ڈاکٹر غلام نبی فائی نے ایک مضمون میں کہاہے کہ تنازعہ کشمیر کے حل سے ہی خطے میں امن قائم کیا جا سکتا ہے ۔