برطانوی وزیرِ خارجہ کی افغانستان میں امن و ترقی کے لیے خطے میں پاکستان کے کردار کی تحسین۔

 پاکستان،برطانیہ کا خطے میں امن کیلئے ملکر کام کرنیکا عزم
16 نومبر 2016 (19:35)
0

پاکستان اور برطانیہ نے خطے میں امن کے فروغ اور دو طرفہ تعلقات کو نئی بلندیوں تک لے جانے کے لیے مل کر کام کرنے کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔
یہ اتفاقِ رائے وزیرِ داخلہ چوہدری نثار علی خان اور برطانوی وزیرِ خارجہ بورس جانسن کے درمیان بدھ کے روز لندن میں ملاقات میں ہوا۔
وزیرِ داخلہ نے کہا کہ پاکستان نے برطانیہ کے ساتھ اپنے تعلقات کو ہمیشہ اہمیت دی ہے اور کئی شعبوں میں دونوں ملکوں کی خارجہ پالیسی کے مشترکہ اہداف ہیں۔
چوہدری نثار علی خان نے برطانوی وزیر خارجہ سے ملاقات میں پاکستان کے اندرونی معاملات میں بھارت کی مداخلت کا مسئلہ بھی اُٹھایا اور کہا کہ بھارتی اقدامات کے باعث خطے کا امن شدید خطرے میں ہے۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان ایسے ہتھکنڈوں سے مرعوب نہیں ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ بھارت نے مذاکرات کے دروازے بند کر دیے ہیں جس سے علاقائی سلامتی خطرے میں پڑگئی ہے۔
وزیرِ داخلہ نے کہا کہ ہم بلا اشتعال فائرنگ سے اپنے فوجیوں کی ہلاکت ہر گز برداشت نہیں کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ پاک بھارت تعلقات میں کشیدگی کا ذمہ دار صرف بھارت ہے۔
مسئلہ کشمیر سے متعلق وزیرِ داخلہ نے کہا کہ پاکستان اس تنازعے پر بلا مشروط بات چیت کو تیار ہے۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان کشمیریوں کی منصفانہ اور برحق جدوجہد آزادی کی حمایت جاری رکھے گا۔
افغانستان کے معاملے پر وزیر داخلہ نے کہا کہ عالمی برادری کو پرامن افغانستا ن کے لیے پاکستان کی کوششوں کا اعتراف کرنا چاہیے کیونکہ افغانستان میں امن پورے خطے کے امن کے لیے سود مند ہوگا۔
برطانوی وزیرِ خارجہ نے افغانستان میں امن و ترقی کے لیے خطے میں پاکستان کے کردار کی تعریف کی۔