Saturday, 25 May 2019, 08:54:22 pm
آئی ایم ایف پروگرام سے قومی معیشت کے فروغ پردوررس اثرات مرتب ہوںگے،مشیر خزانہ
May 16, 2019

خزانہ محاصل اور اقتصادی امور کے بارے میں وزیراعظم کے مشیر ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف پروگرام پر عملدرآمد کے بعد ملکی معیشت میں بہتری آئیگی۔

انہوں نے یہ بات آج گورنر ہائوس کراچی میں تاجربرادری سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔فیڈرل بورڈ آف ریونیور کے چیئرمین سید شبر زیدی اور گورنر سندھ عمران اسماعیل بھی اس موقع پر موجود تھے۔چیئرمین ایف بی آر نے اس موقع پر کہا کہ تاجر برادری نے ایمنسٹی سکیموں کی بھرپور حمایت کی ہے اور انہوں نے اس کو ملکی معیشت کے مفادمیں قرارد یاہے۔گورنر سندھ عمران اسماعیل نے کہا کہ حکومت تاجربرادری کے مسائل حل کرنا چاہتی ہے اور اس سلسلے میں سندھ انڈسٹریل Liaison کمیٹی قائم کی گئی ہے۔ادھر آج کراچی میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے خزانہ امور کے بارے میں وزیراعظم کے مشیر عبدالحفیظ شیخ نے کہا کہ حکومت اقتصادی صورتحال کی بہتری کیلئے مختلف اقدامات کررہی ہے اور آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدہ ان ہی اقدامات میں سے ایک ہے۔مشیر خزانہ نے کہا کہ اس معاہدے کے ذریعے پاکستان کو ائی ایم ایف سے کم شرح سود پر چھ ارب ڈالر ملیں گے جبکہ اسکے علاوہ عالمی بنک اور ایشیائی ترقیاتی بنک سے بھی دو سے تین ارب ڈالر حاصل ہوںگے۔انہوں نے کہاکہ ان اور دیگر اقدامات سے ٹیکس وصولیوں میں اضافہ کرنے میں مدد ملے گی جبکہ خزانہ اور نگرانی کے محکموں میں بھی بہتری آئے گی۔مشیر خزانہ نے بتایا کہ حکومت آئندہ بجٹ میں ترقیاتی منصوبوں کیلئے آٹھ سو ارب روپے کے قریب رقم مختص کریگی جبکہ سماجی تحفظ کے منصوبوں کیلئے بجٹ 180ارب روپے تک بڑھایا جائیگا جو اس وقت سو ارب روپے ہے۔