Monday, 24 September 2018, 12:24:22 pm
علاقائی ملکوں کیساتھ تعلقات مزید مستحکم کرنے کیلئے خارجہ پالیسی کو ازسر نو ترتیب دیا،دستگیر
May 16, 2018

 وزیر خارجہ خرم دستگیرنے اپنی وزارت کی کٹوتی کی تحریکوں پر بحث سمیٹتے ہوئے کہا کہ پاکستان نے خطے کے ممالک کے ساتھ تعلقات مزید مضبوط بنانے کیلئے خارجہ پالیسی کا لائحہ عمل ازسر نو تشکیل دیا ہے۔انہوں نے خارجہ پالیسی کے محاذ پر موجودہ حکومت کی کامیابیاں اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کے نتیجے میں آزمودہ دوست ملک چین کے ساتھ اقتصادی تعلقات کا مستحکم بنیادوں پر استوار ہونا ہماری سب سے بڑی کامیابی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وسط ایشیائی ملکوں کے ساتھ ہمارے تعلقات مزید بہتر ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کاسا 1000 اور تاپی جیسے منصوبوں سے پاکستان ان ممالک کے ساتھ منسلک ہوجائے گا۔خرم دستگیر نے کہا کہ پاکستان افغانستان کے ساتھ غلط فہیموں کے خاتمے اور دوطرفہ تعلقات میں بہتری کیلئے مسلسل رابطے میں ہے، انہوں نے کہا کہ دونوں ملکوں نے امن اور یکجہتی کا لائحہ عمل مرتب کیا ہے۔ مسئلہ کشمیر سے متعلق وزیر خارجہ  نے کہا کہ پاکستان نے تمام عالمی فورمز پر اس دیرینہ تنازعے کو بھرپور انداز میں اٹھایا ہے۔ انہوں نے کہاکہ شنگھائی تعاون تنظیم میں پاکستان کی مستقل رکنیت بھی ایک بڑا سنگ میل ہے۔ انہوں نے کہا کہ روس کے ساتھ بھی ہمارے تعلقات میں بہتری آئی ہے اور ہم نے اس کے ساتھ پہلے دفاعی معاہدے پر دستخط اور مشترکہ فوجی مشقیں بھی کی ہیں۔