Wednesday, 21 August 2019, 12:18:58 pm
سکھ برادری کے نمائندوں نے وزیراعظم کے کرتارپورراہداری کھولنے کے اقدام کو سراہا
April 16, 2019

سکھ برادری کے نمائندوں نے پاکستان کی جانب سے کرتارپور راہداری کھولنے کے اقدام کو اس سال نومبر میں بابا گرونانک کے پانچ سو پچاسویں جنم دن کے موقع پر سکھوں کے لئے ایک تحفہ قرار دیا ہے۔

ریڈیو پاکستان کے خبروں اور حالات حاضرہ چینل کے ایک پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے وزیراعظم عمران خان کے کرتارپور راہداری کھولنے کے اقدام کو سراہا اور ان کا شکریہ ادا کیا۔

پاکستان پربندھک کمیٹی کے چیئرمین سردار تارا سنگھ نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے سکھ برادری کے لئے کرتارپور راہداری کھولنے سمیت سہولت کے متعدد اقدامات سے سکھ برادری کے دل جیت لیے ہیں۔

پنجاب کے پارلیمانی سیکرٹری سردار مہندر پال سنگھ نے افسوس ظاہر کیا کہ بھارت کرتارپور راہداری کھولنے سے متعلق تاخیری حربے استعمال کررہاہے۔

لندن میں مقیم سردار مہربان سنگھSergeri نے کہا کہ صرف پرامن ماحول میں ترقی اور خوشحالی کا حصول ممکن ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارتی حکومت کا ملک میں اقلیتوں سے رویہ نامناسب ہے۔

بھارت کے سردار مہندر سنگھ نے کہا کہ کرتارپور راہداری سے دونوں ملکوں کے تعلقات بہتر بنانے اور لوگوں کو قریب لانے میں مدد ملے گی۔

جموں کی رنیو کور نے ریڈیو پاکستان کو بتایا کہ سکھ کرتار پور راہداری کھولنے کے لئے وزیراعظم عمران خان اور بھارتی کرکٹر اور سیاستدان نوجوت سنگھ سدھو کی کوششوں پر ان کے شکر گزار ہیں جس سے بھارت کے سکھ یاتری ویزے کے بغیر کرتارپور میں گوردوارہ یاترا کرسکیں گے۔