وزیر اعلیٰ کا علاقے کے انفراسٹرکچر منصوبوں کیلئے فنڈز فرا ہمی پر وزیراعظم سے اظہار تشکر۔

میڈیا گلگت بلتستان کو ترقی یافتہ بنانے کیلئے مدد کرے:حفیظ الرحمن
15 اکتوبر 2015 (22:20)
0

گلگت بلتستان کے وزیر اعلی حافظ حفیظ الرحمان نے کہا ہے کہ قومی ایکشن پلان پر عمل درآمد سے گلگت بلتستان میں امن و امان کی صورت حال بہتر بنانے میں مدد ملی ہے۔
امن و امان کی بہتری روڈ انفرا سٹرکچر کی ترقی و بہتر فضائی خدمات کی وجہ سے گزشتہ ایک سال اور تین ماہ میں ساڑھے چھ لاکھ سیاحوں نے گلگت بلتستان کا دورہ کیا، یہ تعداد گزشتہ تیس سال کے مقابلے میں زیادہ ہے۔
جی بی ہائوس میں جمعرات کو پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے حافظ حفیظ الرحمان نے کہا کہ اس وقت گلگت بلتستان کا ملک کے دوسرے حصوں کے ساتھ رابطہ قراقرم ہائی وے کے ذریعے ہے اب گلگت چترال روڈ، شوٹر پاس روڈ، اسکردو مظفرآباد روڈ اور بابو رائے کوٹ، بابو سر ناران کاغان روڈ تعمیر کی جائیں گی تاکہ شاہرائے قراقرم پر ٹریفک کا بوجھ کم ہو۔
ان منصوبوں پر 82 ارب روپے کی لاگت آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان میں سیاحوں کی آمد میں اضافہ پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا پر اس علاقے کو نمایاں کوریج دینے سے ممکن ہوا۔
انہوں نے میڈیا پر زور دیا کہ وہ گلگت بلتستان کو ملک کے دوسرے علاقوں کے برابر ترقی یافتہ بنانے کیلئے ہماری مدد کریں۔
انہوں نے وزیر اعظم کا شکریہ ادا کیا جو علاقے کے انفراسٹرکچر کے منصوبوں کیلئے فنڈز فراہم کر رہے ہیں، گلگت بلتستان سے واپڈا کے مطابق 50 ہزار میگا واٹ بجلی پیدا کی جا سکتی ہے۔
انہوں نے کہا کہ ہائیڈل اور معدنی وسائل سے بھرپور فائدہ اٹھانے کیلئے پنجاب سرمایہ کاری بورڈ کی طرز پر مقامی بورڈ قائم کرنے کی منصوبہ بندی کر رہے ہیں تاکہ ملکی و غیرملکی سرمایہ کاروں کو سرمایہ کاری کی طرف گامزن کیا جا سکے۔