نوازشریف نے کہا ہے کہ یہ ضروری ہے کہ ہم ایک خطہ ایک سڑک پروگرام کو باہم مربوط ترقی کے صحیح تناظر میں دیکھیں۔

پاکستان سماجی و اقتصادی ترقی یقینی بنانے کیلئے فعال شراکت داری کا بھرپور حامی ہے:وزیراعظم
15 مئی 2017 (14:57)
0

وزیراعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ پاکستان سماجی و اقتصادی ترقی اورخوشحالی یقینی بنانے کے لئے خطے میں تعاون اور فعال شراکت داری کا بھرپور حامی ہے ۔وہ آج بیجنگ میں پالیسی لائحہ عمل کے بارے میں رہنمائوں کی گول میز کانفرنس سے خطاب کررہے تھے۔
وزیراعظم نے کہا کہ یہ ضروری ہے کہ ہم ایک خطہ ایک سڑک پروگرام کو باہم مربوط ترقی کے صحیح تناظر میں دیکھیں یہ اب ایشیا ،افریقہ اوریورپ کی نصف عالمی معیشتوں کیلئے مرکز بن رہا ہے ۔

مربوط ترقی کے لئے تعاون بڑھانے کے بارے میں گول میز کانفرنس کی دوسری نشست میں اظہار خیال کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان پختہ عزم کے ساتھ ایک پرامن،باہم منسلک اورخوشحال ہمسائیگی کے نصب العین پر عمل پیرا ہے ۔
انہوں نے کہاکہ علم پرمبنی معیشت کے فروغ کیلئے تیزی سے ڈیجیٹلائزیشن اور اگلے مرحلے کی ترقی میں شامل ہونا ہمارے ایجنڈے کی کلید ہیں۔
وزیراعظم نے کہا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری اشیاء کی رسد اور لاجسٹک کیلئے نئے مواقع پیدا کررہی ہے اور پیداواری نیٹ ورکس قائم کئے جارہے ہیں اور اس نے پاکستان کی معیشت کو نئی جہت اوراہمیت دی ہے ۔
انہوں نے کہا کہ گوادر بندرگاہ، جو چین پاکستان اقتصادی راہداری کا محور ہے مشرقی، مغربی اور جنوبی ایشیا کو نہ صرف آپس میں ملائے گی بلکہ اس سے افریقہ اور یورپ کی منڈیوں تک رسائی بھی ملے گی۔ وزیراعظم نے کہا کہ ایک خطہ ایک سڑک پروگرام کا مرکزی نکتہ خصوصاً ترقی پذیر ملکوں کے درمیان روابط اور طویل مدتی ترقی ہے ۔