بھارت کی جانب سے عسکری قوت میں اضافہ پاکستان کیلئے خطرہ ہے۔

بھارت کے ایٹمی قوت میں اضافے سے جنوبی ایشیاء کے استحکام کو نقصان پہنچ رہا ہے
15 مئی 2016 (10:05)
0

ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ بھارت کی جانب سے اپنی روائیتی اور ایٹمی قوت میں اضافے سے جنوبی ایشیاء کے تذویراتی استحکام کو نقصان پہنچ رہا ہے اور اس سے خطے میں ہتھیاروں کی دوڑ شروع ہوسکتی ہے۔

انہوں نے یہ بات اسلام آباد میں ایک گول میز مذاکرے میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہی جس میں پاکستان اور بھارت کی تازہ ترین صورتحال ، موجودہ ایٹمی نظام، روائیتی دفاع اور علاقائی سلامتی کی صورتحال سے متعلق معاملات پر بات چیت کی گئی۔
ڈاکٹر عادل سلطان نے کہا کہ بھارت اپنی روائیتی قوت میں خاطر خواہ اضافے کے علاوہ بیلسٹک میزائلوں سمیت ہر قسم کے ایٹمی ہتھیار تیار کر رہا ہے جس پر خطے کے سب سے بڑی فوجی قوت بننے کا جنون سوار ہے۔
انہوں نے کہا کہ بھارت کی پالیسیوں میں عدم تسلسل بدلتی ہوئی تذویراتی صورتحال اور ایٹمی ہتھیاروں کے تحفظ کے نظام میں خامیوں سے خطے کا سٹریٹیجک استحکام متاثر ہوگا۔
ڈاکٹر رفعت حسین کا کہنا تھا کہ بھارت کی جانب سے عسکری قوت میں اضافہ پاکستان کیلئے خطرہ ہے۔
ڈاکٹر ظفر نواز جسپال نے کہا کہ خطے میں پہلے ہی ہتھیاروں کی دوڑ شروع ہوچکی ہے جس سے خطے میں تذویراتی عدم استحکام کی عکاسی ہوتی ہے۔