وزیراعظم محمدنوازشریف نے اعتماد ظاہر کیا کہ سپریم کورٹ جے آئی ٹی کی رپورٹ سے متعلق ان کے تحفظات سنے گی۔

15 جولائی 2017 (06:27)
0

وزیراعظم محمدنوازشریف نے اعتماد ظاہر کیا کہ سپریم کورٹ جے آئی ٹی کی رپورٹ سے متعلق ان کے تحفظات سنے گی۔
اسلا م آباد میں مسلم لیگ نون کے پارلیمانی پارٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہاکہ وہ جمہوریت، قانون کی حکمرانی اور آزادعدلیہ پر یقین رکھتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ پانامہ پیپرز کے بارے میں مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی متنازعہ رپورٹ ہمارے مخالفین کے بے بنیاد الزامات کا پلندہ ہے ۔
نوازشریف نے کہا کہ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی رپورٹ میں کوئی ٹھوس ثبوت موجود نہیں حتیٰ کہ اس میں کوئی ایک بھی ایسا جملہ نہیں ہے جس سے ان کے بدعنوانی میں ملوث ہونے کا اشارہ ملتاہو۔
وزیراعظم نے دو ٹوک الفاظ میں کہا کہ وہ شکست خوردہ عناصر کے مطالبے پر مستعفی نہیں ہوں گے۔ انہوں نے افسوس ظاہر کیا کہ سیاسی عد م استحکام اور غیر یقینی صورتحال کو ہوا دینے والے عناصر ملک کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ وہ جمہوریت، قانون کی حکمرانی اور عدلیہ کی آزادی پر یقین رکھتے ہیں۔انہوں نے قوم اور پارٹی ارکان کی جانب سے بھرپورساتھ دینے پر انکاشکریہ ادا کیا۔

محمد نوازشریف نے کہا کہ سٹاک مارکیٹ جو چون ہزار پوائنٹس کی ریکارڈ سطح پر پہنچی تھی ان بے اصول اور ترقی اور خوشحالی کے دشمن عناصر کے باعث اس میں کمی کا رجحان ہے ۔

انہوں نے کہا کہ دو ہزار تیرہ سے پہلے پاکستان ایک ناکام ریاست قرار دیئے جانے کے قریب تھی تاہم مسلم لیگ نون کی حکومت نے نہ صرف اس خطرے کو ٹال دیا بلکہ ملکی معیشت کو بھی بحال کیا۔

وزیراعظم نے کہاکہ انکے دور حکومت کے دوران بجلی کے متعدد منصوبے شروع کئے گئے جس میں سے کئی مکمل ہوچکے ہیں۔انہو ں نے کہاکہ حکومت نے مسلح افواج کے تعاون سے دہشت گردوں کیخلاف آپریشن کیا جس کے نتیجے میں دہشت گردوں کی کمرتوڑ دی گئی ہے ۔