Friday, 18 October 2019, 11:31:04 am
پاکستانی حجاج کرام کو وطن واپس لانے کیلئے بعد از حج پروازوں کا سلسلہ مکمل
September 15, 2019

پاکستان حجاج کرام کو وطن واپس لانے کیلئے بعد از حج پروازوں کا سلسلہ آج اختتام پذیر ہوگیا۔وزارت مذہبی امور و بین المذاہب ہم آہنگی کے ترجمان عمران صدیقی نے ریڈیو پاکستان سے انٹرویو میں کہا کہ اس سال سب سے زیادہ دو لاکھ پاکستانیوں نے فریضہ حج ادا کیا۔انہوں نے کہا کہ سرکاری سکیم کے تحت ایک لاکھ تیس ہزار عازمین نے جبکہ پرائیویٹ سکیم کے تحت ستر ہزار عازمین نے فریضہ حج ادا کیا۔ترجمان نے کہا کہ سرکاری سکیم کے تحت پچانوے فیصد حجاج کرام کو مدینہ کے علاقے مرکزیہ میں تھری اور فائیو سٹار ہوٹلوں میں رہائش دی گئی تھی جہاں سے مسجد نبوی پیدل جاسکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی حجاج کرام کیلئے مکہ کے علاقے عزیزہ میں رہائش کیلئے آرام دہ اور جدید عمارتیں کرایہ پر لی گئی تھیں اور رواں سال حج کے دوران حرم جانے کیلئے ٹرانسپورٹ کی بہترین سہولیات مہیا کی گئیں۔عمران صدیقی نے کہا کہ مکہ اور مدینہ میں حجاج کرام کو تین وقت معیاری کھانا فراہم کیا گیا۔ ترجمان نے کہا کہ خوراک سے متعلق چند شکایات ملیں جنہیں آئندہ سال حج کے دوران دور کردیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ مکہ اور مدینہ میں حجاج کرام کی طبی ضروریات کو پورا کرنے کیلئے صحت کی بہترین سہولیات فراہم کی گئیں ۔ رواں سال کم تعداد میں حجاج کرام ہسپتالوں میں داخل ہوئے،99 حجاج کرام انتقال کرگئے جبکہ گزشتہ سال 137 حجاج فوت ہوئے تھے۔عمران صدیقی نے کہا کہ پاکستانی حجاج کرام کو حجاز مقدس لے جانے کیلئے حج پروازوں کا سلسلہ رواں سال جو لائی کو شروع ہوا اور گزشتہ ماہ کی آٹھ تاریخ تک جاری رہا ۔ دوسری طرف حجاج کرام کی وطن واپسی گزشتہ ماہ کی سترہ تاریخ سے شروع ہو کر آج ختم ہوگئی۔ترجمان نے کہا کہ ہر حاجی کو زمزم کی پانچ لیٹر بوتل مفت فراہم کی گئیں۔