Thursday, 20 June 2019, 10:20:15 pm
معاشرے کو رنگ ونسل اور مذہب کی بنیاد پر تقسیم کرنا انتہائی نقصان دہ ہے، صدر
April 15, 2019

صدر ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ پاکستان مقدس مقامات کے تحفظ کیلئے پرعزم ہے اوروہ خطے میں امن و استحکام کی اہمیت سے بخوبی آگاہ ہے۔

پیر کے روز اسلام آباد میں بیساکھی میلے کی تقریبات کے سلسلے میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت کی طرف سے پڑوسی ملک کی حیثیت سے ایک اچھے جذبہ خیرسگالی کے تحت کرتار پور راہداری قائم کی گئی۔

صدر نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے اپنے اقدامات سے امن کی خواہش کی صحیح ترجمانی کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ معاشرے کو رنگ ونسل اور مذہب کی بنیاد پر تقسیم کرنا انتہائی نقصان دہ ہے اور معاشرے سے اس کے تاثرات زائل کرنے میں کئی عشرے درکار ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ مختلف ملکوں کے عوام کو ایک دوسرے کی ثقافت اور روایات سے روشناس کرانے کیلئے عوامی سطح پر روابط انتہائی اہمیت کے حامل ہیں۔

ڈاکٹر عارف علوی نے خطے اور پاکستان اور بھارت کے عوام کے بہترین مفاد میں دونوں ملکوں کے درمیان اچھے تعلقات قائم کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

انہوں نے کہا کہ ملک میں سیکورٹی کی صورتحال میں واضح بہتری آئی ہے جس سے سیاحت کے شعبے کو بڑا فائدہ ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ ملک کے اندر اور باہر دہشتگردی سے نمٹنے کیلئے پاکستان کے اقدامات قابل ستائش ہیں۔

صدر نے اعتماد ظاہر کیا کہ کرتارپور راہداری کھلنے سے دونوں ہمسایہ ملکوں کے درمیان بہتر تعلقات کے قیام میں مدد ملے گی۔

سکھ گوردوارہ پر بندھک کمیٹی کے سردار تارا سنگھ نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے کرتارپور راہداری کھولنے کا اعلان کر کے سکھ برادری کے دل جیت لئے ہیں۔

بھارت سے آئے ہوئے سکھ یاتریوں کے گروپ لیڈر رویندر سنگھ خالصہ نے سکھوں کے مذہبی مقامات کے تحفظ اور دیکھ بھال کیلئے پاکستانی حکومت کی طرف سے کئے گئے اقدامات کو سراہا۔ انہوں نے کہا کہ ہماری آئندہ نسلیں پاکستانی حکومت کے کرتارپور راہداری کھولنے کے اقدام کو ہمیشہ یاد رکھیں گی۔

اس موقع پر سکھ یاتریوں نے صدر عارف علوی کو مختلف تحائف بھی پیش کئے۔