وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ ہم نے معیشت ، سرمایہ کاری ، تجارت ، توانائی ، دفاع اور زراعت کے شعبوں میں تعلقات اور روابط کو بہتر بنانے کیلئے مزید کام کرنے سے اتفاق کیا ہے۔

پاکستان اور آذربائیجان کا مختلف شعبوں میں دوطرفہ تعاون بڑھانے پر اتفاق
14 اکتوبر 2016 (15:24)
0

وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان عالمی امن کیلئے علاقائی اور عالمی تنازعات کے پرامن حل کی مکمل حمایت کرتا ہے ۔وہ آج باکو میں آذربائیجان کے صدر الہام علیوف کے ساتھ مشترکہ نیوز کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔ وزیراعظم نے کہا کہ ہم نے معیشت ، سرمایہ کاری ، تجارت ، توانائی ، دفاع اور زراعت کے شعبوں میں تعلقات اور روابط کو بہتر بنانے کیلئے مزید کام کرنے سے اتفاق کیا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان موجودہ تجارتی حجم موجودہ مواقع سے ہم آہنگ نہیں ہے ۔ انہوں نے اقتصادی اور تجارتی تعاون کے فروغ کیلئے اقدامات پر زور دیا۔

وزیراعظم نے نوکورنو کاراباخ سے آرمینیا کی فوج کے انخلاء اور تنازعے کے پرامن حل کا مطالبہ کیا۔آذربائیجان کے صدر الہام علیوف نے کہا کہ مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق حل ہونا چاہئیے۔ انہوں نے کشمیر کے بارے میں استصواب رائے کے حوالے سے اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عملدرآمد نہ ہونے پر افسوس کا اظہار کیا۔

قبل ازیں  آذربائیجان کے صدر الہام علیوف اور وزیراعظم نواز شریف نے صدارتی محل میں دوطرفہ ملاقات کے دوران اپنے اپنے وفود کی قیادت کی ۔الہام علیوف نے کہا کہ آذربائیجان پاکستان کے ساتھ اقتصادی تعاون مستحکم بنانے کا خواہاں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان مختلف شعبوں میں وسیع البنیاد تعاون کر مزید فروغ دینا چاہئیے۔
وزیراعظم نے کہا کہ انہیں باکو کو جدید اور صاف ستھرا شہر کے طور دیکھنے سے خوشی ہوئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آذربائیجان نے نصف صدی میں نمایاں ترقی کی ہے جو لائق تحسین ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آذربائیجان کو تمام ترقی پذیر ملکوں کے لئے قابل تقلید ہونا چاہئیے۔