شہر میں ڈھونگ انتخابات کے خلاف نوجوان سڑکوں پر نکل آئے اور بھارتی فوجیوں پر پتھرائو کیا۔

نام نہاد انتخابات کا چوتھا مرحلہ:سرینگر اوردوسرے شہروں میں احتجاجی مظاہرے
14 دسمبر 2014 (21:33)
0

مقبوضہ کشمیر میں نام نہاد اسمبلی انتخابات کے چوتھے مرحلے میں پولنگ کے موقع پرسرینگر میں مائی سمہ اور دوسرے علاقوں میں احتجاجی مظاہرے کیے گئے۔
شہر میں ڈھونگ انتخابات کے خلاف نوجوان سڑکوں پر نکل آئے اور بھارتی فوجیوں پر پتھرائو کیا۔
بھارتی فوج نے نوجوان مظاہرین پر آنسوگیس کے گولے پھینکے جس سے جھڑپیں شروع ہوگئیں۔
بھارت نوازنیشنل کانفرنس اور لوک جان شکتی پارٹی کے کارکنوں کے درمیان بھی انتخابی دھاندلی پر جھڑپیں ہوئیں۔
بادشاہ نگر میں ایک پولنگ سٹیشن پر حالات پر قابو پانے کیلئے پولیس کو اس وقت طلب کرنا پڑا جب پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی اور نیشنل کانفرنس کے کارکنوں کے درمیان ہاتھا پائی ہوئی۔
دریں اثناء حریت کانفرنس جموںوکشمیر نے غیر قانونی طور پر نظر بند اپنے رہنما اور اسلامک پولیٹکل پارٹی جموں و کشمیر کے چیئرمین محمدیوسف نقاش کی بگڑتی ہوئی صحت پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔
محمد یوسف نقاش کی جیل میں صحت خراب ہونے پر انہیں سرینگر کے ایس ایم ایچ ایس ہسپتال میں داخل کیاگیا ہے۔
حریت کانفرنس کے ترجمان نے سرینگر میں یک بیان میںشبیر احمد شاہ ،مشتاق الاسلام ، نعیم احمد خان ،فاروق احمد ڈار اور دیگر حریت رہنمائوںکی غیر قانونی نظربندی کی مذمت کی اور ان کی فوری رہائی کامطالبہ کیا ۔