Saturday, 24 August 2019, 04:27:43 pm
بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر دفتر خارجہ طلب، کنٹرول لائن پر بھارتی فوج کی جانب سے جنگ بندی کی خلاف ورزیوں کی مذمت
August 14, 2019

دفتر خارجہ نے آج بھارت کے ڈپٹی ہائی کمشنر Gaurav آہلووالیہ کو طلب کیا اور کنٹرول لائن کے تتہ پانی سیکٹر میں قابض بھارتی فوج کی جانب سے جنگ بندی کی بلااشتعال خلاف ورزیوں کی مذمت کی۔

دفتر خارجہ نے ایک بیان میں کہا کہ Laychayal گاؤں کا ایک بے گناہ شہری 38سالہ سرفراز احمد بھارتی فائرنگ سے شہید ہو گیا۔

دفترخارجہ کے ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے بھارت پر زور دیا کہ وہ 2003ء کے جنگ بندی معاہدے کی پاسداری کرے۔ جنگ بندی کی خلاف ورزی کے ان واقعات اور دیگر واقعات کی تحقیقات کرے۔

بھارتی فوج کو جنگ بندی کا مکمل احترام کرنے کی ہدایت کرے اور کنٹرول لائن اور ورکنگ باؤنڈری پرامن قائم رکھے۔

انہوں نے بھارت پر زور دیا کہ وہ بھارت اور پاکستان کے لئے اقوام متحدہ کے فوجی مبصر گروپ کو عالمی ادارے کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کے تحت اپنا کردار ادا کرنے دے۔

بھارتی قابض فورسز کنٹرول لائن اور ورکنگ باؤنڈری پر توپخانے، مارٹر گولوں اور خودکار ہتھیاروں سے شہری آبادی والے علاقوں کو مسلسل نشانہ بنا رہی ہیں اور یہ سلسلہ ابھی تک جاری ہے۔

بیان میں کہا کیا کہ شہری آبادی والے علاقوں کو دانستہ نشانہ بنانا قابل مذمت، انسانی وقار، عالمی انسانی حقوق اور قوانین کے منافی ہے۔ بھارت کی جانب سے جنگ بندی کی خلاف ورزیاں علاقائی امن و سلامتی کیلئے خطرہ ہیں اور اسے ان کے سنگین نتائج بھگتنے پڑسکتے ہیں۔