Wednesday, 21 August 2019, 12:15:47 pm

مزید خبریں

 
گوردوارہ پنجہ صاحب حسن ابدال میں 3روزہ بیساکھی میلہ اختتام پذیر
April 14, 2019

 تین روزہ بیساکھی میلہ اتوار کو گرد وارہ پنجہ صاحب حسن ابدال میں ختم ہوگیا۔ اس موقع پر موسمیاتی تبدیلی کے بارے میں وزیراعظم کے مشیر ملک امین اسلم نے بھوگ اکھنڈ پاتھ صاحب کے نام سے ہونے والی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت اقلیتوں کو معاشرے کا یکساں شہری سمجھتی ہے اور انہیں تمام حقوق فراہم کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے کرتار پور راہداری کھولنے کااعلان کرکے سرحدپار سکھ برادری کومحبت کا پیغام بھیجا۔مذہبی امور اور بین المذاہب ہم آہنگی کے پارلیمانی سیکرٹری آفتاب جہانگیر نے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے دنیا کے ہر حصے سے سکھ برادری کو پاکستان میں سرمایہ کاری اور ملک کے خوبصورت سیاحتی مقامات کے دورے کی دعوت دی۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پنجاب کے پارلیمانی سیکرٹری سردار مہندر پال سنگھ نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے کرتارپور راہداری کھولنے کے اقدام سے دنیا بھر کے سکھوں کے دل جیت لئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت اقلیتوں کی مکمل آزادی پر یقین رکھتی ہے اور اس حوالے سے کئے جانے والے اقدامات بے مثال ہیں۔رکن پنجاب اسمبلی یاور بخاری نے کہا کہ کرتارپور راہداری کا تعمیراتی کام تیزی سے جاری ہے جو اس سال نومبر میں باباگورونانک کے پانچ سو پچاسویں یوم پیدائش سے پہلے مکمل کیا جائے گا۔اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے پاکستان پربندھک کمیٹی کے چیئرمین سردار تارڑ سنگھ نے کہا کہ کرتارپور راہداری کھولنے کے بارے میں فیصلہ امن کا پیغام ہے۔انہوں نے کہا کہ راہداری پر پچاس فیصد کام مکمل ہو چکا ہے۔ انہوں نے افسوس ظاہر کیا کہ بھارت کرتارپور راہداری منصوبے پر سنجیدگی سے عملدرآمد نہیں کررہا۔اس موقع پر متروکہ وقف املاک بورڈ کے چیئرمین طاہر احسان نے پاکستان میں گوردوارہ پنجہ صاحب سمیت سکھوں کے مقدس مقامات پر مہیا کی جانے والی سہولتوں کو اجاگر کیا۔مختلف ملکوں میں سکھ برادری کی تنظیموں کے نمائندوں نے بھی کرتارپور راہداری کھولنے کے بارے میں پاکستانی حکومت کے فیصلے کی تعریف کی اور اس دیرینہ مطالبے کو پورا کرنے پر موجودہ حکومت کا شکریہ ادا کیا۔متروکہ وقف املاک بورڈ کے ترجمان عامر ہاشمی کے مطابق پاکستان بھارت اور دیگر ملکوں سے دس ہزار کے قریب سکھ یاتریوں نے میلے میں شرکت کی۔انہوں نے کہا کہ بھارت سے دو ہزار سے زائد سکھ یاتری میلے میں شریک تھے۔اس موقع پر امن و امان کی صورتحال یقینی بنانے کے لئے سکیورٹی کے فول پروف انتظامات کئے گئے۔