File photo

مقبوضہ کشمیر:عیدالاضحی کے موقع پر سخت کرفیو نافذ
13 ستمبر 2016 (20:47)
0

مقبوضہ کشمیر میں حکام نے منگل کے روز عیدالاضحی کے موقع پر سخت کرفیو نافذ رکھا ۔ دن میں تقریبات اور روایتی اجتماعات نہیں ہوئے اور نہ نماز عید ادا کی گئی ۔

سری نگر کے علاقے حضرت بل اور مرکزی جامع مسجد سمیت وادی کی کسی بھی مسجد میں نماز عید کے اجتماعات نہیں ہوسکے ۔ سید علی گیلانی ، میرواعظ عمر فاروق اور محمدیسین ملک پرمشتمل مزاحمتی اتحادی قیادت نے سری نگر میں اقوام متحدہ کے دفتر کی جانب سے مارچ کی اپیل کی تھی تاکہ عالمی برادری کو تنازعہ کشمیر کے حل کے حوالے سے اپنی ذمہ داریوں سے آگاہ کیاجائے ۔
حکام نے مارچ کو ناکام بنانے کیلئے تاریخ میں پہلی بار وادی کشمیر کے تمام دس اضلاع میں مسلسل کرفیو نافذ کررکھا ہے مارچ کو روکنے کیلئے پولیس اور پیراملٹری دستے تعینات کئے گئے ۔
لوگ کرفیو کی پروا نہ کرتے ہوئے سڑکوں پرنکل آئے اور کئی مقامات پر بھارت مخالف اور آزادی کے حق میں نعرے لگائے ۔
بھارتی فوج نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے مہلک پیلٹ گنز سمیت طاقت کا وحشیانہ استعمال کیا ۔
شوپیاں میں بھارتی فوج نے فائرنگ کرکے ایک نوعمر لڑکے کو شہید کردیا بانڈی پورہ میں جھڑپوں کے دوران ایک اور نوجوان کو گولی مارکرشہیدکردیا گیا۔