تہمینہ جنجوعہ نے کہاکہ بھارتی کارروائیاں علاقائی امن وسلامتی کیلئے سنگین خطرہ ہیں۔

پاکستان نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے مستقل رکن ممالک کو آگاہ کیا کہ بھارتی فوج کی جانب سے جنگ بندی کی مسلسل خلاف ورزیوں نے کنٹرول لائن اور ورکنگ باؤنڈری کی صورتحال کو پیچیدہ بنادیاہے
13 اکتوبر 2017 (08:07)
0

پاکستان نے کنٹرول لائن اور ورکنگ بائونڈری پر خصوصا گزشتہ دو مہینوں کے دوران بھارتی فوج کی جانب سے بلااشتعال جنگ بندی کی مسلسل خلاف ورزیوں پر گہری تشویش ظاہر کی ہے۔
سیکرٹری خارجہ اور ڈائریکٹرجنرل ملٹری آپریشنز نے اس تشویش کااظہار اسلام آباد میں اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے مستقل رکن ملکوں کے مشنوں کے سربراہان کو دی گئی ایک بریفنگ میں کیا۔
سیکرٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے اپنے افتتاحیہ کلمات میں بھارتی فوج کی جانب سے شہری آبادی پر بلااشتعال فائرنگ اور گولہ باری پر گہری تشویش کااظہار کیا جس کے نتیجے میں موجودہ سال کے دوران45 شہری شہید ہوئے اور خواتین اوربچوں سمیت155 افراد زخمی ہوئے۔
انہوں نے کہاکہ پاکستان نے انتہائی ضبط وتحمل کامظاہرہ کیا لیکن ہمیں جوابی رد عمل پرمجبور کیاگیا۔
تہمینہ جنجوعہ نے کہاکہ بھارتی کارروائیاں علاقائی امن وسلامتی کیلئے سنگین خطرہ ہیں۔
اقوام متحدہ کے فوجی مبصر گروپ کے اہم کردار پر زوردیتے ہوئے انہوں نے کہاکہ پاکستان مبصرگروپ کے ساتھ مکمل تعاون اور رسائی فراہم کررہاہے۔
تاہم بھارت مبصرگروپ کے ساتھ تعاون نہیں کررہا اور اسے مقبوضہ علاقے تک مکمل رسائی نہیں دے رہا۔ڈائریکٹر جنرل ملٹری آپریشنز نے کنٹرول لائن اور ورکنگ بائونڈری پرموجودہ صورتحال کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی۔